صحافی برادری کے معاشی قتل عام کے نتائج خطرناک ہونگے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے صحافیوں کے معاشی قتل عام پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ روزانہ کی بنیاد پر صحافیوں کو صحافتی اداروں سے نکالنا باعث افسوس ہے، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ تبدیلی سرکار نے کی حکومتیں آنے کے بعد دوسرے شعبوں کی طرح صحافیوں کو بے روزگار کرنے کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ جاری ہے جو انتہائی حران کن اور قابل افسوس ہے، انہوں نے کہا کہ ملک میں صحافیوں کو تحفظ نہ ہونے کے ساتھ ساتھ اب ان کا روزگار بھی خطرے میں پڑ چکا ہے اور یہی وجہ ہے کہ روزانہ سینئر ترین صحافیوں کو بغیر کوئی وجہ بتائے بے روزگار کیا جا رہا ہے ، انہوں نے کہا کہ حکومتوں کی غیر سنجیدگی نے قلم کاروں کے مسائل میں اضافہ کر دیا ہے حکمرانوں کو چاہئے کہ اشاعتی اداروں کو صحافیوں کو بے روزگار کرنے کے نتائج سے بھی آگاہ کریں، انہوں نے کہا کہ ملک کے طول وعرض میں پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا کے کارکنوں کو فارغ کر کے کیا پیغام دیا جا رہا ہے، سردار بابک نے کہا کہ صحافی برادری کی بے چینی کے نتائج خطرناک ہونگے اور حکومت کو فوری طور پر اس اہم مسئلہ کا نوٹس لینا چاہئے تاکہ صحافیوں کے بچوں سے نوالہ چھیننے کی روش سے باز رہا جائے،انہوں نے مزید کہا کہ مرکزی و صوبائی سطح پر قانون سازی کے ذریعے صحافیوں کے روزگار کو تحفظ ہونا چاہئے اور انہیں ان کی اہلیت اور تجربے کی بنیاد پر صلہ ملنا چاہئے، اے این پی اس مشکل گھڑی میں صحافی برادری کے ساتھ ہے اور ہر فورم پر ان کے حقوق کیلئے آواز اٹھاتی رہے گی۔

Facebook Comments