اشتہار کیلئے کسی زمانے میں منتیں کرنے والا آج ملی مشر کے خلاف بیان بازی کررہا ہے،ملک غلام مصطفی

پشاور(پ ر) عوامی نیشنل پارٹی سٹی ڈسٹرکٹ پشاور کے صدر ملک غلام مصطفی نے کہا ہے کہ وہ شوکت یوسفزئی آج ملی مشر اسفندیار ولی خان کے خلاف بیان بازی کررہا ہے جو کسی زمانے میں ایک اخباری اشتہار کے لئے اے این پی کی منتیں کیا کرتا تھا،شوکت یوسفزئی اپنی قیمت بڑھانے کی خاطر اپنے لیول سے کچھ زیادہ ہی بول رہا ہے،باچا خان مرکز پشاور سے جاری اپنے بیان میں ملک غلام مصطفی نے کہا کہ شوکت یوسفزئی جیمپین بننے کی ناکام کوشش کرہا ہے،پختون قوم جانتی ہے کہ ولی باغ اور شوکت یوسفزئی جیسے کرپٹ شخص کی کیا حیثیت ہے،فرشتوں کے رحم وکرم پر وزیر اطلاعات بننے والے شوکت یوسفزئی کو اپنی ماضی یاد رکھنی چاہیے کہ وہ کس طرح پی ٹی آئی کی گزشتہ حکومت میں وزارت سے نکالے گئے تھے اگر شوکت یوسفزئی کو احتساب کا اتنا ہی شوق ہے تو وہ جاکر سب سے پہلے علیمہ خان اور بعد میں اپنا احتساب کریں تب جاکر اُن کو پتہ لگ جائیگا کہ اصل معنوں میں پختون قوم کے ساتھ زیادتی کرنے والے کون ہیں،ملک غلام مصطفی نے مزید کہا کہ اسفندیار ولی خان اور اے این پی کے سیاست کا محور ہی اٹھارواں آئینی ترمیم ہے،اے این پی اور اسفندیار ولی خان کو ڈیکٹیشن دینے والا شوکت یوسفزئی کون ہوتا ہے ،اے این پی نے ہی اٹھارواں آئینی ترمیم منظور کیا ہے اور اس کے تحفظ کی ذمہ داری بھی اے این پی پر عائد ہوتی ہے،صوبے کو گیس اور بجلی سے محروم کرنے والے آج فرمان جاری کررہے ہیں کہ ہمیں اٹھارویں آئینی ترمیم پر سیاست نہیں کرنی چاہیے،اگر پی ٹی آئی کو اپنی سیاست کی اتنی ہی فکر پڑی ہے تو وہ ہمت کریں کہ لوگوں کو ریلیف دیں ناکہ لوگوں اور سیاسی رہنماوں کے حوالے حکومتی مشینری کا استعمال کرکے بیانات جاری کریں۔

Facebook Comments