Aug 122018
 

عدلیہ آزاد نہیں رہی،ملک میں سول مارشل لاء نافذ ہے، ایمل ولی خان

حقائق پر مبنی رپورٹنگ کرنے والوں پر قدغن، لاڈلے کا پرچار کرنے والے میڈیا کو کھلی آزادی ہے۔

تمام نیوز چینل اب عسکری چھتری تلے پی ٹی وی کا کردار ادا کر رہے ہیں۔

ملک میں جو حالات پیدا کر دیئے گئے ہیں ان کے نتائج بھیانک ہونگے۔

الیکشن کے حوالے سے اے این پی کے ساتھ کسی ادارے کی کوئی ڈیل یا بات چیت نہیں ہوئی۔

سانحہ بابڑہ کے شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، بابڑہ شہداء کی یادگار پر میڈیا سے بات چیت

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ حقائق پر مبنی رپورٹنگ کرنے والوں پر قدغن جبکہ لاڈلے کا پرچار کرنے والے میڈیا کو کھلی آزادی دے دی گئی ہے ، صحافت کی آزادی کیلئے سیاسی رہنماؤں اور صحافیوں نے جو قربانیاں دیں وہ رائیگاں جاتی دکھائی دے رہی ہیں،تمام نیوز چینل اب پی ٹی وی کا کردار ادا کر رہے ہیں،ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم شہداء بابڑہ کے موقع پر چارسدہ میں بابڑہ کے شہدا کی یادگار پر پھول چڑھانے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ حقائق مسخ کر دئے گئے ہیں اور ملک میں جو حالات پیدا کر دیئے گئے ہیں ان کے نتائج بھیانک ہونگے، اں نے کہا کہ ملک میں سول مارشل لاء نافذ ہے ،عدلیہ آزاد نہیں رہی ،یہ وہ عدلیہ ہے جس کی آزادی کیلئے تحریک میں اے این پی کے32کارکن کراچی میں شہید کر دیئے گئے، ہم پاکستان کے خلاف نہیں بلکہ اس میں مسلط کئے جانے والے موجود نظام کے خلاف ہیں ملک بڑی قربانیوں سے آزاد ہوا اور اس آزادی کیلئے ہمارے آباؤاجداد نے جانوں کے نذرانے پیش کئے ، ایمل ولی خان نے کہا کہ ملک کے تین اہم ستون لاڈلے کی سپورٹ میں اس قدر مگن ہیں کہ وہ اپنی اصل ذمہ داریوں سے غافل ہو چکے ہیں، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنے والے غریب لوگوں کے خلاف دہشت گردی کے مقدمات قائم کئے جا رہے ہیں جس نے بلانا ہے مجھے عدالت میں طلب کرے میں حق بات سے کبھی پیچھے نہیں ہٹوں گا،انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس پی ٹی آئی کے ترجمان ہیں اور جب بھی عمران خان کے خلاف کوئی بات ہو تو جواب وہ دیتے ہیں اسی طرح فوج کے خلاف کوئی بات کرے تو جواب پی ٹی آئی کی طرف سے آتا ہے ، ایمل خان نے کہا کہ موجودہ سیٹ اپ سال یا دو سال سے زیادہ چلنے والا نہیں،تاہم ہماری خواہش ہے کہ ایسا جمہوری پاکستان بنے جس میں حقیقی جمہوری نظام رائج ہو ،ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے ڈیل کے حوالے سے تمام چہ میگوئیوں کو مسترد کرتے ہوئے واضح کیا کہ الیکشن کے حوالے سے اے این پی کے ساتھ کسی ادارے کی کوئی ڈیل یا بات چیت نہیں ہوئی ، انہوں نے سیکورٹی تھریٹس کے حوالے سے کہا کہ یہ پوری طرح پلانٹڈ ہے ،سیکورٹی خدشات کے خط جسے جاری کئے جاتے ہیں اس کی بجائے ٹارگٹ کسی اور کو کر دیا جا تا ہے،انہوں نے کہا کہ پی ٹی ایم کے جائز مطالبات کی حمایت کرتے ہیں،بابڑہ کے حوالے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سانحہ بابڑہ کے شہداء نے حق کیلئے قربانی دی اور اس وقت کی فوج نے گولیوں کی بوچھاڑ کر کے 700خدائی خدمتگاروں کو خون میں نہلا دیا ،انہوں نے کہا کہ خدائی خدمت گاروں کی یہ قربانیاں کبھی رائیگاں نہیں جائیں گی۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']