Jul 212018
 

دہشت گردی کے خاتمے کیلئے ملک کی ناکام پالیسیاں تبدیل کرنا ہونگی،میاں افتخار حسین
اے این پی نے دہشت گردی کا ہمیشہ ڈٹ کر مقابلہ کیا،حالیہ دہشت گردی اے این پی کو آؤٹ کرنے کیلئے تھی۔
اے پی ایس کے دردناک واقعہ کے بعد گھروں میں چھپ جانے والے آج عوام کا سامنا نہیں کر سکتے۔
عمران خان اور پرویز خٹک نے سیاست میں گند ڈال دیا ہے ، نازیبا الفاظ کا استعمال ان کا وطیرہ بن چکا ہے۔
دیگر جماعتوں کے سیاسی کارکنوں کو گالی دینے سے پہلے پرویز خٹک اپنے گریبان میں جھانکیں۔پی کے65میں انتخابی جلسوں سے خطاب

پشاور (پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ اے این پی نے ہمیشہ دہشت گردی کا ڈٹ کر مقابلہ ہے اور کبھی بھی ڈر کر اپنے کاز سے پیچھے نہیں ہٹی ،اے پی ایس کے دردناک واقعہ کے بعد گھروں میں چھپ جانے والے آج عوام کا سامنا نہیں کر سکتے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے65میں انتخابی مہم کے دوران مختلف تقریبات اور انتخابی جلسوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا،انہوں نے کہا کہ عوام اپنے روشن مستقبل کیلئے دیانتدار قیادت کا انتخاب کریں اور اے این پی وہ واحد سیاسی جماعت ہے جس کے کسی ایم پی اے ،ایم این اے اور وزیر پر کوئی کرپشن کا کیس نہیں ہے ، انہوں نے کارکنوں کے حوصلے اور جذبے کو بھی سلام پیش کیا اور کہا کہ انہوں نے اتنے بڑے سانحے کے بعد بھی حوصلے کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑا ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ عوام کی خدمت کیلئے میدان میں نکلا ہوں اور راستے میں آنے والی ہر تکلیف اور رکاوٹ عبور کر کے عوام تک پہنچوں گا ، انہوں نے کہا کہ اے این پی قربانیاں دینے والی جماعت ہے جس کی پوری دنیا معترف ہے ، انہوں نے کہا کہ انتخابی مہم ختم ہونے کے قریب ہے لہٰذا سیکورٹی ادارے اور حکومت الیکشن کو پر امن اور شفاف بنانے کیلیئے ہر ممکن اقدامات کریں، انہوں نے کہا کہ ہم ہتھیار نہیں پھینکیں گے ،انہوں نے کہا کہ دہشت گردی ملک کی ناکام خارجہ و داخلہ پالیسیوں کی پیداوار ہے جب تک یہ پالیسیوں سپر پاورز کی بجائے ملک و قوم کے مفاد میں نہیں بنتیں تب تک دہشت گردی کا خاتمہ ممکن نہیں ، انہوں نے کہا کہ اے این پی الیکشن میں بھرپور حصہ لے گی اور کامیابی حاصل کر کے پائیدار امن کا قیام یقینی بنائے گی تاکہ آنے والی نسلوں کا مستقبل محفوظ بنایا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان اور پرویز خٹک نے سیاست میں گند ڈال دیا ہے اور نازیبا الفاظ کا استعمال ان کا وطیرہ بن چکا ہے ، انہوں نے کہا کہ دیگر جماعتوں کے سیاسی کارکنوں کو گالی دینے سے پہلے پرویز خٹک اپنے گریبان میں جھانکیں وہ خود اسی پارٹی میں 8سال تک مزے لوٹتے رہے، انہوں نے کہا کہ عوام تبدیلی کے دھوکے میں آنے کی بجائے حقیقت پسندی کا ثبوت دیں اور اے این پی کا کامیاب کر کے اپنے حقوق کا تحفظ یقینی بنائیں۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']