Jul 032018
 

ایک استاد ایک کلاس کا نظریہ اپناکر ایڈہاک ازم کا خاتمہ کیا جائے گا،سردار حسین بابک
اے این پی اقتدار میں آ کر کم سے کم فاصلے پر سکولوں کی تعمیر ممکن بنائے گی۔
سابق حکومت نے جس طرح صوبے کو نقصان پہنچایا وہ کوئی محب وطن نہیں کر سکتا۔
تعلیمی میدان میں بہت جلد انقلاب آئے گا،صحت کیلئے جی ڈی پی کا 6فیصد مختص کریں گے۔
روخانہ پختونخوا اور ستوری دَ پختونخوا کا دوبارہ اجرا کیا جائے گا۔
پی ٹی آئی کی حکومت پہلی اور آخری بار آئی تھی ۔پی کے 22بونیر میں انتخابی جلسوں سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ اے این پی حکومت میں آ کر تعلیم کے شعبہ پر خصوصی توجہ دے گی اور کم سے کم فاصلے پر سکولوں کی تعمیر ممکن بنائے گی تاکہ طلبا و طالبات کو گھر کی دہلیز پر تعلیم فراہم کی جا سکے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے حلقہ نیابت میں مختلف مقامات پر شمولیتی تقریبات ، انتخابی اجلاس اور جرگوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر پی ٹی آئی اور مختلف سیاسی جماعتوں کی اہم سرکردہ شخصیات نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، سردار حسین بابک نے کہا کہ الیکشن سے قبل عوام کی اے این پی میں شمولیت فتح کی جانب اہم قدم ہے ،انہوں نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو مبارکباد پیش کی اور کہا کہ گزشتہ پانچ سال میں صوبے کے عوام کا بری طرح استحصال کیا گیا اور عوام کو بے روزگاری ، مہنگائی کے سوا کچھ نہیں ملا ، انہوں نے کہا کہ اے این پی اقتدار میں آ کر کم سے کم فاصلے پر سکولوں کی تعمیر ممکن بنائے گی تاکہ طلباء اور طالبات کو ان کی دہلیز پر تعلیمی سہولیات میسر آ سکیں ،انہوں نے کہا کہ معذوروں ، بیواؤں اور مستحقین کیلئے خصوصی مراعات کا اعلان کیا جائے گا اور طلباء و طالبات کیلئے تمام تعلیمی سہولیات اور ضروریات کی فراہمی کو فوری اور ترجیحی بنیادوں پر حل کریں گے ،روخانہ پختونخوا اور ستوری دَ پختونخوا کا دوبارہ اجرا کیا جائے گا، انہوں نے کہا کہ ایک استاد ایک کلاس کا نظریہ اپنایا جائے گا اور ایڈہاکیزم کا خاتمہ کیا جائے گا، سردار حسین بابک نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے نئے اضلاع میں تعلیم ،صحت اور اقتصادی ترقی کیلئے منصوبہ بندی اور اس پر عمل درآمد یقینی بنانے کیلئے حتی الوسع کوششیں کی جائیں گی تاکہ انہیں بھی ترقیافتہ علاقوں کے برابر لایا جا سکے ، انہوں نے کہا کہ ہر ضلع میں یونیورسٹی اور ہر حلقہ میں کالج کے پلان سے تعلیمی میدان میں بہت جلد انقلاب آئے گا،صحت کیلئے جی ڈی پی کا 6فیصد مختص کریں گے جبکہ خاندانی میڈیکل رجسٹریشن فارم اورریکارڈ رکھنے کا نظام متعارف کرایا جائے گا۔سردار حسین بابک نے کہا کہ اے این پی کا انتخابی منشور عوام کی امنگوں کے مطابق ہے اور پارٹی حکومت میں آ کر اپنے منشور پر من و عن عمل درآمد یقینی بنائے گی ، انہوں نے کہا کہ سابق حکومت نے جس طرح صوبے کو انتظامی و مالی طور پر نقصان پہنچایا وہ کوئی محب وطن نہیں کر سکتا، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت پہلی اور آخری بار آئی تھی اور یہ ایک بھیانک خواب تھا ، انہوں نے کہا کہ آنے والا دور اے این پی کا ہے اور عوام 25جولائی کوتبدیلی کے جھوٹے دعویداروں کا صوبے سے صفایا کر دیں گے ۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']