Mar 092018
 

پٹواریوں کے مطالبات تسلیم نہیں کئے گئے تو ہمیں مجبوراً ان کی حمایت میں میدان میں آنا پڑے گا۔ میاں افتخارحسین

پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ زندگی کا ایسا کوئی شعبہ باقی نہیں رہا جس سے متعلق طبقہ احتجاج پر نہ ہو۔ موجودہ حکومت باالاخر کیا کررہی ہے۔وہ پشاور میں انجمن پٹواریان کے احتجاجی کیمپ کا دورہ کرتے ہوئے مظاہرین سے خطاب کررہے تھے۔ میاں افتخارحسین نے ان سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ سرکاری ملازمین کے جائز مطالبات تسلیم کیے جائیں، پروموشن اور مستقلی ملازمین کا حق ہے جس سے حکومت راہِ فراراختیار نہیں کر سکتی۔ انہوں نے کہا کہ ہم سیاسی پوائنٹ سکورنگ نہیں چاہتے، حکومت ملازمین کے مسائل تسلیم کر لیں تو ہم اس کا شکریہ ادا کریں گے۔ لیکن اگر ان کے مطالبات پر غور نہیں کیا گیا تو ہمیں مجبوراً پٹواریوں کی حمایت میں میدان میں آنا پڑے گا۔ میاں افتخار حسین نے احتجاج کرنے والے مظاہرین پر بھی زور دیا کہ وہ اراضی کے ریکارڈ اور پیمائش کے حوالے سے غریب عوام کو درپیش مشکلات میں ان کی رہنمائی کریں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں اراضی کے ریکارڈ کے حوالے سے غریب لوگوں کو زیادہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور انجمن پٹواریان و قانون گویان ایک ایسا طبقہ ہے جن کے ہاتھوں میں انتہائی اہم ذمہ داریاں ہیں اور عوام کی رہنمائی کرنے اور ان کی مشکلات کم کرانے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']