Nov 302017
 

 حکومت طلباء و طالبات پر تعلیمی اداروں کے دروازے بند کرنے سے باز رہے، سردار حسین بابک

 

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے حکومت کی طرف سے یونیورسٹی کی ٹیوشن اورداخلہ فیسوں میں اضافے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن مہم کے دوران مفت تعلیم کے وعدے کرنے والے درحقیقت عوام کو ورغلانے کے لیے جھوٹے نعرے لگاتے رہے۔ اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ پشاور یونیورسٹی میں کئی روز سے تمام طلباء تنظیمیں فیسوں میں اضافے کے خلاف احتجاج پر ہیں لیکن حکمرانوں کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہی۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی اسمبلی میں روز اول سے ہی تعلیمی ایمرجنسی کا نفاذ کر کے مفت تعلیم دینے کے دعوے کیے گئے لیکن اب طلباء پر تعلیمی اداروں کے دروازے بند کرکے ان کے لیے مشکلات پیدا کی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں معیار تعلیم کو یقینی بنانے اور طلباء و طالبات کو تمام سہولتیں فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے لیکن بد قسمتی سے نوجوانوں کو ورغلا کر حکومتی ایوانوں میں پہنچنے والوں کی ترجیحات میں تعلیم شامل ہی نہیں تھی۔ انہوں نے کہا کہ طلباء و طالبات کے لیے مشکلات پیدا کرنا اور ان پر تعلیمی اداروں کے دروازے بند کرنا کہاں کا انصاف ہے؟ حکومت فوری طور پر فیسوں میں اضافے کا فیصلہ واپس لیں اور طلباء کے قیمتی وقت کو ضائع ہونے سے بچائے۔ انہوں نے کہا کہ صوبے کی تاریخ میں پہلی بار پروفیسرز سے لے کر طلباء تک اپنے جائز مطالبات کے لیے سڑکوں پر آئے لیکن بدقسمتی سے حکومت نے صورتحال کو سنجیدہ نہیں لیا۔

 

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']