Nov 302017
 

مساجد و مدارس کی حرمت سے نا بلد کنٹینرز کی سیاست پر یقین رکھتے ہیں، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ پختونوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے اور گزشتہ ساڑھے چار سال میں پختونخوا کے جو حقوق غصب کئے گئے انہیں واپس حاصل کیا جائے گا ، آئندہ عوام انتخابات میں باچا خان بابا کے پیروکار صوبے کے اختیارات بنی گالہ سے چھین کر اپنے صوبے میں واپس لائیں گے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے 25مردان توت کلے میں ایک شمولیتی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، پی کے 25مردان سے امیدوار اور ضلع ناظم حمایت اللہ مایار اور ضلعی جنرل سیکرٹری لطیف الرحمان نے بھی اس موقع پر خطاب کیا ، امیر حیدر خان ہوتی نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں باچا خان بابا کے قافلے میں شامل ہونے پر مبارکباد پیش کی ، اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ سیاسی تاریخ میں پہلی بار اے این پی نے تمام امیدواروں کو ٹکٹ میرٹ کی بنیاد پر تقسیم کئے جبکہ باقی تمام سیاسی جماعتوں میں صرف نامزدگیاں کی جا تی ہیں ، انہوں نے کہا کہ جن درخواست گزاروں کو ٹکٹ نہیں ملے وہ ہمارے لئے زیادہ قابل احترام ہیں البتہ اسے بنیاد پر اگر کوئی انتشار پیدا کرنا چاہے اس کیلئے پارٹی میں کوئی جگہ نہیں ہو گی، انہوں نے کہا کہ موجودہ دور ہم سے اتحاد و اتفاق کا متقاضی ہے اور ہم سب کو مل کر صوبے کے حقوق کا دفاع کرنا ہو گا، صوبے کی مجموعی صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ وزیر اعلیٰ نے تنگ نظری کی انتہا کر دی ہے اور عبدالولی خان یونیورسٹی کے فنڈز صرف اس لئے روک رکھے ہیں کیونکہ وہ ولی خان کے نام سے منسوب ہے ، انہوں نے کہا کہ پرویز خٹک پہلے عمران خان سے پوچھیں کہ پشاور میں شوکت خانم ہسپتال کیلئے اراضی کہاں سے آئی ؟ انہوں نے کہا کہ ہم نے سیاسی اختلافات کے باوجود 80کروڑ کی اراضی شوکت خانم ہسپتال کیلئے وقف کر دی، انہوں نے کہا کہ مساجد کی خدمت کو کرپش کا نام دینے والے مساجد اور مدارس کی حرمت سے نا بلد ہیں اور وہ صرف کنٹینر کی سیاست پر یقین رکھتے ہیں،انہوں نے کہا کہ کپتان وزارت عظمی کی دوڑ میں لگے ہیں انہیں خیبر پختونخوا سے کوئی سروکار نہیں ، تخت اسلام آباد کیلئے پنجاب کا ووٹ بنک چاہئے اس لئے پختونوں کے مینڈیٹ کی توہین کی گئی ،امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ ہمیں پنجاب کی خدمت پر اعتراض نہیں البتہ اس کام کیلئے پختونوں کے وسائل اور ان کا کندھا استعمال نہ کیا جائے ، انہوں نے کہا کہ حکومت کی مدت مکمل ہونے کو ہے اور حال میں جو منصوبے شروع کئے جا رہے ہیں ان کے مستقبل کی کسی کو فکر نہیں تمام منصوبے ادھورے چھوڑے جا رہے ہیں تاہم اے این پی آئندہ الیکشن میں کامیابی کے بعد یہ تمام منصوبے مکمل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ پختون اپنے حقوق کے تحفظ کیلئےءاے این پی کے سرخ جھنڈے تلے متحد ہو جائیں۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']