Nov 102017
 

 اداروں کے درمیان ٹکراو کی پالیسی ملک کے مفاد میں نہیں،آئندہ الیکشن میں جنات ووٹ پول نہیں کریں گے، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ 2018کے الیکشن میں جنات ووٹ پول نہیں کریں گے، فیصلہ انسانوں کے ووٹ پر ہوگا اور کامیابی اے این پی کا مقدر بنے گی۔ نوجوان اس ملک کا قیمتی سرمایہ ہیں اور مستقبل میں ملک کی باگ ڈور نوجوان نسل نے سنبھالنی ہے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے4 پشاور میں این وائی او کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر دیگر صوبائی قائدین نے بھی خطاب کیا، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ عوام موجودہ صوبائی حکومت کی غیرسنجیدہ پالیسیوں سے متنفر ہو چکے ہیں اور آئے روز عوام کی اے این پی میں جوق در جوق شمولیت اس بات کا بین ثبوت ہے کہ اب خیبر پختونخوا کے لوگ اے این پی کو اپنے حقوق کے تحفظ کا ضامن سمجھتے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ آئین میں قومی حکومت کی کوئی گنجائش نہیں ہے اور جو لوگ اس کی خواہش رکھتے ہیں وہ ملک و قوم کے خیر خواہ نہیں ہوسکتے ، انہوں نے کہا کہ موجودہ سیاسی صورتحال اس نہج پر کھڑی ہے جہاں کسی بھی غلطی کی گنجائش نہیں اور سیاستدانوں نے اس صورتحال کا ادراک نہ کیا تو جمہوریت ڈی ریل ہو سکتی ہے ، امیر حیدر خان نے کہا کہ قبل از وقت انتخابات کا مطالبہ صوبے کے خلاف سازش ہے اور عمران خان صوبے کو ملنے والی 5اضافی سیٹیں ضائع کرنے کے درپے ہیں ، انہوں نے کہا کہ ہم نے تحفظات کے باوجود خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی کا مینڈیٹ تسلیم کیا لہٰذا تمام منتخب حکومتوں کو اپنی معیاد پوری کرنی چاہئے اور الیکشن اپنے مقررہ وقت پر ہونے چاہئیں، انہوں نے کہا کہ اداروں کے درمیان ٹکراو کی پالیسی ملک کے مفاد میں نہیں لہٰذا نواز شریف بھی صبر سے کام لیں،انہوں نے کہا کہ موجودہ دور میں پختونوں کی بیداری اور ان کی اتحاد کی اشد ضرورت ہے اور اس عظیم مقصد کے لیے مجھے نوجوان نسل کے تعاون کی سب سے زیادہ ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو سیاسی میدان میں لانے کا سہرہ اے این پی کے سر ہے اور اس کا واضح ثبوت یہ ہے کہ صوبے کی تاریخ میں سب سے کم عمر وزیر اعلیٰ منتخب کرنے کا اعزاز اے این پی نے حاصل کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے دور حکومت میں نہ صرف مرکز سے صوبے کے حقوق اور حصہ حاصل کیا بلکہ بیرونی مالیاتی اداروں کے اعتماد کی وجہ صوبے میں ترقی کا مثالی دور شروع کر دیا تھا ۔صوبائی صدر نے کہا کہ ہم نے اپنے دور حکومت میں نامساعد حالات کے باوجود بیروزگاروں کو تاریخی روزگار فراہم کیا ، دہشتگردی خلاف جنگ میں کلیدی کردار ادا کیااور صوبے کے مسائل اور مشکلات سے نکلنے کیلئے ہمیشہ دیگر سیاسی جماعتوں کیساتھ مشاورت سے آگے بڑھے اور اپنی اسی کامیابی اور کارکردگی کی بنیاد پر 2018کے الیکشن میں کامیابی حاصل کریں گے۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبے کے وسائل اور ذرائع آمدن کا ہر فورم پر دفاع کیا جائیگا۔اے این پی کے صوبائی صدر نے کہاکہ پی ٹی آئی کی حکومت تاریخ کی ناکام ترین حکومت ہے سوات ایکسپریس وے پر بغلیں بجانے والوں نے پچیس سال تک اس شاہراہ کو ٹھیکدار کے پاس گروی رکھ دیاہے اور غریب عوام کے جیبوں پر بوجھ ڈال کر اخراجات کو پوراکیاجارہاہے انہوں نے کہا کہ اے این پی پر الزامات لگانے والے دیکھ لیں کہ پانامہ میں اسفندیار ولی خان یا امیر حیدر ہوتی کا نام شامل نہیں بلکہ عمران خان اور ان کے رفقاءکا ہے۔ ہمارے ہاتھ صاف ہیں اور آئندہ الیکشن میں سیاسی میدان خالی نہیں چھوڑیں گے۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']