Oct 122017
 

این اے4کا ضمنی الیکشن آئندہ عام انتخابات کیلئے گیم چینجر ثابت ہو گا ، سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ این اے 4 میں باچا خان بابا کے پیروکاروں کا مقابلہ مرکزی و صوبائی حکومتوں سے ہو رہا ہے ایک طرف ٹرانسفارمرز اور گیس کے پائپ سیاسی رشوت کے طورپر استعمال ہو رہے ہیں جبکہ دوسری جانب پختونوں کی بقا اور حقوق کی محافظ جماعت اے این پی میدان میں ہے ، اے این پی بھاری اکثریت سے جیتے گی اور عوام 26اکتوبر کو حلقے کو فراموش کرنے والوں کو مسترد کر دیں گے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے این اے 4ضمنی الیکشن کی انتخابی مہم کے دوران بڈھ بیر میں بڑے انتخابی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان اور اے این پی کے امیدوار خوشدل خان ایڈوکیٹ نے بھی جلسہ سے خطاب کیا،سردار حسین بابک نے کہا کہ این اے4اے این پی کا گڑھ ہے اور تاریخی پس منظر یہی بتاتا ہے کہ یہ سیٹ ہمیشہ سے اے این پی کی رہی ہے، انہوں نے کہا کہ این اے4میں پارٹی کی تمام تنظیموں اور صاحب الرائے مشران کو حلقے میں جاری اتخابی مہم پر خراج تحسین پیش کیا اور کہا کہ ایک جانب حکومتی مشینری اور سرکاری وسائل اس حلقے کے عوام کو لبھانے کیلئے موجود ہیں اور دوسری جانب باچا خان بابا کے سپاہی میدان میں کھڑے ہیں ، انہوں نے کہا کہ جیت ہمیشہ حق کی ہوتی ہے اور این اے4میں بھی کامیابی باچا خان بابا کے سپاہیوں کی ہو گی،انہوں نے کہا کہ اس حلقے میں فتح آئندہ عام انتخابات پر گہرے اثرات ڈالے گا، انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی ناکامی اور مرکزی حکومت کی صوبے کے ساتھ زیادتی کو عوام مسترد کر دینگے اور عوام کے حقوق کی محافظ اور ان کی بقا کی جنگ لڑنے والی جماعت اے این پی بھاری اکثریت سے کامیاب ہو گی، انہوں نے کہا کہ اے این پی نے نا مساعد حالات کے باوجود عوام کی خدمت کی ہے جس کی پوری دنیا معترف ہے اور اس بات کا واضح ثبوت روزانہ کی بنیاد پر ہونے والی شمولیتیں ہیں ،ایمل ولی خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ26اکوبر اے این پی کی کامیابی کا دن ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پختونوں کی ترقی کا راز ان کے اتحاد و اتفاق میں مضمر ہے،انہوں نے کہا کہ آج ہمیں جن مشکلات اور آزمائشوں کا سامنا ہے ان کا مقابلہ اتحاد سے ہی کیا جا سکتا ہے، انہوں نے کہا کہ تمام پختونوں کو ذاتی مفادات سے بالاتر ہو کر قومی مفاد میں سوچنا ہوگا ، انہوں نے کہا کہ این اے4کا ضمنی الیکشن آئندہ عام انتخابات کیلئے گیم چینجر ثابت ہو گا ۔انہوں نے کہا کہ خوشدل خان اے این پی کے امیدوار ہیں اور عوام اپنے حقوق کے تحفظ کیلئے لالٹین کو اپنا قیمتی ووٹ دے کرکا میاب بنائیں۔انہوں نے کہا کہ نے کہا کہ مرکزی و صوبائی حکومت نے چار سال تک این اے4کو نظر انداز کئے رکھا ،عمران خان پختونوں کی قیمت پر پنجاب کی سیاست کرتے رہے اور تخت اسلام آباد کیلئے خیبر پختونخوا کے عوام اور وسائل کو لوٹا گیا ، لیکن اب جبکہ ضمنی الیکشن آیا تو پنجاب سے مایوس عناصر نے پھر خیبر پختونخوا کے عوام کو دھوکہ دینے کی ٹھان لی، تاہم عوام باشعور ہو چکے ہیں اور وہ جھوٹے وعدے کرنے والوں کو جان چکے ہیں،انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے گزشتہ چار سال میں خیبر پختونخوا کا حلیہ بگاڑ دیا ہے، اور جتنے قرضے اس حکومت نے لئے ہیں صوبے کی تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی ۔انہوں نے کہا کہ 26اکتو بر کا سورج اے این پی کی کامیابی کی نوید لے کر طلوع ہو گا

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']