Oct 092017
 

 وزیر اعلی کا دورہ بونیر مایوس کن رہا ، خالی نعروں سے عوام کا پیٹ نہیں بھرتا، سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے عمران خان اور ان کی صوبائی حکومت کے دورہ بونیر کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بڑے بڑے دعوے اور نعرے لگانے والی پارٹی کے وزیر اعلیٰ ساڑھے چار سال بعد بونیر تشریف لائے اور اپنی خالی خولی تقریروں سے بونیر کے عوام کا پیٹ بھرنے کی کوشش کرتے رہے حالانکہ وہاں کے عوام اس انتظار میں تھے کہ تبدیلی سرکار بونیر کے عوام کے مسائل کے حل کیلئے خصوصی اعلانات کرے گی لیکن ان کی امیدوں پر پانی پھر گیا،انہوں نے کہا کہ بونیر کے عوام تعلیم ، صحت ، مواصلات اور کھیل کود کے میدانوں اور دیگر ضروریات کے حوالے سے وزیر اعلیٰ کی جانب سے اعلانات کے منتظر تھے لیکن وزیر اعلیٰ کا وہاں خالی ہاتھ جانا بونیر کے عوام کی توہین کے مترادف ہے انہوں نے کہا کہ2013کی انتخابی مہم کے دوران عمران خان نے بونیر کے عوام سے وعدے کئے تھے جن کا ساڑھے چار سال تک کوئی نام و نشان نہیں نظر آیا اور اب ان کے وزیر اعلیٰ اور تمام وزراء خالی ہاتھ وہاں جانا کون سی تبدیلی ہے،سردار حسین بابک نے کہا کہ دوسروں پر الزامات لگانا اور جھوٹے وعدے کرنا انتہائی آسان جبکہ عملی کام انتہائی مشکل ہے اور اے این پی ہر دور میں یہ مشکل کام انجام دیتی رہی ہے،انہوں نے کہا کہ بونیر کے عوام 2013کی طرح2018کے الیکشن میں بھی تبدیلی والوں کو گھاس نہیں ڈالیں گے ، انہوں نے استفسار کیا کہ کیا بونیر اس صوبے کا حصہ نہیں اور کیا سرکاری خزانے میں بونیر کی ترقی کا کوئی حصہ نہیں؟انہوں نے کہا کہ اے این پی نے بونیر کے کونے کونے میں ترقی کا عمل شروع کیا ہوا ہے اور عوام اس بات کے گواہ ہیں کہ سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر خان ہوتی نے اپنے دور حکومت میں بونیر کے11دورے کئے اور بونیر کیلئےء کروڑوں روپے کے ترقیاتی پیکجز کا اعلان کیا ،انہوں نے کہا کہپرویز خٹک کا دورہ بونیر محض دکھاوا اور عوام کے ساتھ کھلا مذاق ہے جبکہ یونیورسٹی کا نام نہاد اعلان پہلے صوبائی حکومت کے وزیر بھی کر چکے ہیں ، انہوں نے کہا کہ عوام باشعور ہو چکے ہیں اور وہ جھوٹے وعدوں اور لمبی تقریریں کرنے والوں کو جان چکے ہیں۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']