Jul 312017
 

پختون ایس ایف کی تقریب

باچا خان بابا کے تعلیم کیلئے انقلابی اقدامات تاریخ کا انمٹ باب ہیں ، سردار حسین بابک 

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور پختون ایس ایف کے صوبائی ایڈوائزر سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ باچا خان بابا نے حکومتی اور ریاستی تعاون کے بغیر خدائی خدمتگاروں کے ساتھ مل کو تعلیم کے فروغ کیلئے جو انقلابی اقدامات کئے وہ تاریخ کا انمٹ باب ہیں ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان مرکز میں پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن کے زیر اہتمام باچا خان انٹری ٹیسٹ سکالر شپ کیلئے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اے این پی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان ، سابق صوبائی وزیر حاجی ہدایت اللہ خان اور سٹی جنرل سیکرٹری سرتاج خان نے بھی اس موقع پر خطاب کیا ، سردار حسین بابک نے کہا کہ پختون ایس ایف کا جمہوری معاشرے میں ایک کلیدی کردار ہے۔اورتنظیم نئی نسل میں جمہوری رویے پروانچڑھانے میں اہم کردار ادا کر رہی ہے ، انہوں نے کہا کہ تنظیم کو فلاحی طلباء کی رہنمائی اور فلاحی سرگرمیاں میں حصہ لینا چاہئے ، انہوں نے کہا کہ باچا خان بابا قوم کے غمخوار تھے اور انہوں نے فرنگی سامراج کی مخالفت کے باوجود آزاد مدرسے قائم کئے اور لوگوں کو ان مدرسوں میں تعلیم حاصل کرنے کیلئے شعور اجاگر کیا۔ صوبائی جنرل سیکرٹری نے کہا کہ اس مقصد کی خاطر انہوں نے صعوبتیں برداشت کیں لیکن تعلیم کے فروغ کے اپنے مشن سے پیچھے نہیں ہٹے ، انہوں نے کہا کہ اے این پی خدائی خدمتگار تحریک کی تسلسل جماعت ہے اور ہمیشہ تعلیم کو ترجیحی بنیادوں پر عام کرنے کیلئے انقابی اقدامات کرتی رہی ہے، انہوں نے کہا کہ مستقبل میں بھی باچا خان بابا کے نقش قدم پر چلتے ہوئے تعلیم کے شعبے میں اقدامات کئے جائیں گے اور وہ دن دور نہیں جب صوبے سے ناخواندگی کا نام و نشان مٹ جائے گا۔ انہوں نے پختون ایس ایف کے طلباء سے کہا کہ وہ تعلیم کے فروغ کے حوالے سے باچا خان بابا کے طرز عمل کو اپنائیں اور دیگر نئے آنے والے طلباء کی رہنمائی اور فلاحی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ نصابی و ہم نصابی سرگرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']