Jul 132017
 

 ورکرز ویلفیئر بورڈ کے ملازمین کو بنی گالہ کے سامنے احتجاج کی سزا دی جا رہی ہے، حاجی غلام احمد بلور

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر حاجی غلام احمد بلور نے کہا ہے کہ ورکرز ویلفیئر بورڈ کے سینکڑوں ملازمین پہلے حکومت کی نااہلی اور غیر ذمہ داری کے باعث تنخواہوں سے محروم رہے جبکہ اب انہیں ملازمتوں سے فارغ کر کے ان کی جگہ نیا سٹاف بھرتی کئے جانے کا عندیہ دیا جا رہا ہے،اے این پی کے صوبائی ترجمان ہارون بشیر بلور کے ہمراہ ورکرز ویلفیئر بورڈ کے متاثرہ ملازمین کے احتجاجی کیمپ کے دورے کے موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے حاجی غلام احمد بلور نے کہا کہ ان ملازمین کے دُکھوں کامداوا کرنے کی بجائے حکومت انہیں فارغ کرنے پر تل گئی ہے جو کہ قابل مذمت ہے اُنہوں نے کہا کہ تین ہزار سے زائد ملازمین کو بے روزگار کر کے حکومت غریب آدمی سے جینے کا حق بھی چھین رہی ہے جبکہ کپتان نے اپنے انتخابی منشور میں نوجوانوں کو روزگار دینے کا وعدہ کیا تھا، انہوں نے کہا کہ گزشتہ برس ورکرز ویلفیئر بورڈ کے ملازمین دو ماہ تک بنی گالا میں عمران خان کے گھر کے سامنے احتجاج پر رہے لیکن کپتان اور صوبائی حکومت نے ان غریب اور بے چارے ملازمین کے مسائل پر کوئی توجہ نہیں دی، اُنہوں نے کہا کہ صوبے میں اقتدار میں آنے کے بعد عمران خان نہ صرف اپنا وعدہ بھول گئے ہیں بلکہ نوجوانوں کو روز گار دینے کے بجائے غریب ملازمین کو روزانہ کی بنیاد پر بیروزگار کر رہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کو غریب اور مجبور سرکاری ملازمین کو ملازمتوں سے فارغ کرنے کی بجائے ان کو مستقل کرنا چاہیے، انہوں نے اس امر پر حیرت کا اظہار کیا کہ خزانہ خالی ہے اور سرکاری ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے ان کے پاس پیسے نہیں تو ایسے میں نئے ملازمین بھرتی کر کے انہیں اجرت کیسے ادا کی جائیگی۔ اُنہوں نے کہا کہ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ لوگوں کو روزگار کے بہتر مواقع فراہم کرے اور بیروزگاری ختم کرنے کیلئے فوری اور عملی اقدامات اُٹھائے۔ 

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']