Jul 052016
 

مورخہ : 5 جولائی 2016 بروز منگل

عوامی نیشنل پارٹی نے کسٹم ایکٹ کے خلاف آل پارٹیز کانفرنس 12جولائی کو طلب کر لی۔
ملاکنڈ ڈویژن کے تمام منتخب ارکان قومی ، صوبائی اسمبلی اورسینیٹ شرکت کریں گے۔
ضلعی و تحصیل ناظمین و نائب ناظمین ، چیمبر آف کامرس ، انجمن تاجران ،وکلاء، صحافی اور ہر طبقہ فکر کے لوگ شرکت کریں گے۔
* ملاکنڈ ڈویژن کے عوام نے دہشت گردی کے خلاف بے پناہ قربانیاں دی ہیں ،
پچھلے تین سال میں حکومتوں نے ملاکنڈ ڈویژن کو کچھ دینے کی بجائے ان کے جائز حقوق پر ڈاکہ ڈالا ہے
ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کیلئے بہت بڑا امتحان ہے، کسٹم ایکٹ کے خاتمے کیلئے سیاست سے بالاتر ہو کر میدان میں نکلنا ہو گا۔
حکومتوں کو کسٹم ایکٹ کی واپسی پر مجبور کریں گے اور اس ایکٹ کے خاتمے تک احتجاج جاری رکھیں گے۔

پشاور (پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی نے کسٹم ایکٹ کے خلاف آل پارٹیز کانفرنس طلب کر لی ہے۔ آل پارٹیز کانفرنس 12 جولائی بروز منگل بوقت دو بجے بمقام فشنگ ہٹ چکدرہ میں منعقد ہو گی۔ کانفرنس میں ملاکنڈ ڈویژن کے تمام منتخب ارکان قومی ، صوبائی ، سینیٹ ، ضلعی و تحصیل ناظمین و نائب ناظمین ، چیمبر آف کامرس ، سول سوسائٹی ، صحافتی تنظیمیں ، انجمن تاجران اور ملاکنڈ ڈویژن کے ہر طبقہ فکر کے لوگ شرکت کریں گے۔
سردار حسین بابک نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کیساتھ بہت بڑی زیادتی کی گئی ہے۔ ہم اس انتظار میں تھے اور حکومتی یقین دہانیاں کرادی گئی تھی کہ کسٹم ایکٹ کو واپس لیا جائیگا۔ لیکن دو مہینے گزرنے کے باوجود ملاکنڈ ڈویژن اور کوہستان میں لوگ کسٹم ایکٹ کو واپس نہیں لیا گیا۔ آل پارٹیز کانفرنس میں منظم اور بھرپور احتجاجی تحریک کو آخری شکل دے دی جائے گی اور تمام شرکاء کی باہمی مشاورت اور تجاویز کی روشنی میں ایک منظم ، متحرک اور بھرپور احتجاجی تحریک کا آغاز ہو گا کہ حکمرانوں کو ملاکنڈ ڈویژن کے خلاف زیادتی کو واپسی پر مجبور کردیں گے۔ اُنہوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام نے دہشتگردی کے خلاف بے پناہ قربانیاں دیں اور قدرتی آفات نے ڈویژن کو بہت بڑا نقصان پہنچایا ہے۔ انفراسٹرکچر مکمل طور پر تباہ ہو چکا ہے لیکن موجودہ حکومتوں نے کسٹم ایکٹ کا نفاذ کر کے عوام کے تمام تر قومی قربانیوں پر پانی پھیر دیا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کسٹم ایکٹ کے خلاف گاؤں گاؤں بھرپور احتجاج کیلئے ابھی سے تیاریاں شروع کریں۔ اُنہوں نے کہا کہ حکومتوں کو کسٹم ایکٹ واپس لینے پر مجبور کریں گے اور تب تک اپنے احتجاج کو جاری رکھیں گے جب تک یہ ظالمانہ ایکٹ واپس نہیں لیا جاتا۔
سردار حسین بابک نے ملاکنڈ ڈویژن کے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ سیاست سے بالا تر اس احتجاجی تحریک کو کامیاب بنانے اور تیاریوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔

[suffusion-the-author]

[suffusion-the-author display='description']