دہشت گردی ملک کی ناکام خارجہ و داخلہ پالیسیوں کی پیداوارہے

 Party News  Comments Off on دہشت گردی ملک کی ناکام خارجہ و داخلہ پالیسیوں کی پیداوارہے
Jul 142018
 

دہشت گردی ملک کی ناکام خارجہ و داخلہ پالیسیوں کی پیداوارہے، میاں افتخار حسین

انتخابی عمل سبوتاژ کرنے کیلئے بڑا منصوبہ بنایا گیا،روک تھام نہ کی گئی تو بڑی تباہی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

صورتحال مختلف ہے، سیکورٹی اداروں اور حکومت کو اس نازک صورتحال کا ادراک کرنا ہو گا۔

پشاور ،بنوں اور مستونگ میں ہونے والی دہشت گردی کی کاروائیاں قابل مذمت ہیں۔

اے این پی الیکشن میں کامیابی کے بعد پائیدار امن کیلئے حتی الوسع کوششیں کرے گی۔

عوام ہارون بلور کی شہادت کا بدلہ لینے کیلئے 25جولائی کو اے این پی پر اپنے بھرپور اعتماد کا اظہار کریں۔

ہارون بلور کی شہادت نے ہمارے حوصلوں کو مزید تقویت دی ہے۔قاسم کلے میں شمولیتی جلسہ سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا کہ ہارون بلور کی شہادت نے ہمارے حوصلوں کو مزید تقویت دی ہے اور پہلے سے زیادہ جوش و جذبے کے ساتھ میدان میں اتریں گے ، شہید امن بشیر احمد بلور اور ہارون بلور کی قربانیوں کے بعد عوام پر فرض ہے کہ ان کی شہادت کا بدلہ لینے کیلئے کثیر تعداد میں باہر نکلیں اور 25جولائی کو اے این پر اپنے بھرپور اعتماد کا اظہار کریں ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے تین روزہ سوگ کے بعد اپنی انتخابی مہم دوبارہ شروع کرتے ہوئے پی کے65میں قاسم کلے میں شمولیتی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر درجنوں افراد نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ،میاں افتخار حسین نے شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں مبارکباد پیش کی ، اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہہارون بلور کے بعد بنوں اور مستونگ میں ہونے والی دہشت گردی کی کاروائیاں قابل مذمت ہیں اور ان کاروائیوں کے بعد یہ بات واضح ہو چکی ہے کہ انتخابی عمل سبوتاژ کرنے کیلئے بڑا منصوبہ بنایا گیا ہے ، انہوں نے کہا کہ 2013میں صرف اے این پی کو ٹارگٹ کیا گیا جبکہ اس بار تمام سیاسی جماعتیں دہشت گردوں کے نشانے پر ہیں اور ضرورت اس بات کی ہے کہ حکومت اس کے سدباب کیلئے کوششیں کرے،انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو سزا کے باوجود الیکشن کا بائیکاٹ نہ کرنے کا فیصلہ خوش آئند ہے ، انہوں نے کہا کہ کارکنوں کے حوصلے کو سلام پیش کرتے ہیں کہ انہوں نے اتنے بڑے سانحے کے بعد بھی حوصلے کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑا ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ سیکورٹی ادارے اور حکومت کو اس نازک صورتحال کا ادراک کرنا ہو گا ایسا نہ ہو ذرا سی غفلت کسی بڑے نقصان کا پیش خیمہ ثابت ہو ، انہوں نے کہا کہ ہم ہتھایر نہیں پھینکیں گے اور میدان میں موجود رہیں گے ،انہوں نے کہا کہ دہشت گردی ملک کی ناکام خارجہ و داخلہ پالیسیوں کی پیداوار ہے جب تک یہ پالیسیوں سپر پاورز کی بجائے ملک و قوم کے مفاد میں نہیں بنتیں تب تک دہشت گردی کا خاتمہ ممکن نہیں ، انہوں نے کہا کہ اے این پی الیکشن میں بھرپور حصہ لے گی اور کامیابی حاصل کر کے پائیدار امن کیلئے بھرپور اقدامات کرے گی تاکہ آنے والی نسلوں کا مستقبل محفوظ بنایا جا سکے۔

عبدالولی خان یونیورسٹی کے ملازمین کے معاشی قتل عام کا حساب لیں گے

 Party News  Comments Off on عبدالولی خان یونیورسٹی کے ملازمین کے معاشی قتل عام کا حساب لیں گے
Jun 302018
 

عبدالولی خان یونیورسٹی کے ملازمین کے معاشی قتل عام کا حساب لیں گے، امیر حیدر خان ہوتی

غریب ملازمین 25جولائی تک صبر سے کام لیں ، حکومت میں آ کر سب کو بحال کیا جائے گا۔

سابق حکومت کے چہیتوں کے اقدام کے پیچھے پختون دشمنی کے سوا کچھ نہیں۔

ملازمین کے منہ سے نوالہ چھینے والے کسی رورعایت کے مستحق نہیں۔

دھرنوں کی سیاست نے عوام کی محرومیوں میں مزید اضافہ کیا ۔یونیورسٹی ملازمین کے وفد سے بات چیت

پشاور( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر اور سابق وزیراعلیٰ امیرحیدرخان ہوتی نے عبدالولی خان یونیورسٹی سے مستقل ملازمین کو برطرف کرنے کے فیصلے پر شدید غم وغصے کا اظہا رکرتے ہوئے کہاہے کہ اقتدار میں آتے ہی تمام نکالے گئے ملازمین کو بحال کیاجائے گا جبکہ غریب ملازمین کے خلاف کاروائی کرنے والوں سے حساب کتاب لیں گے، وہ مردان میں عبدالولی خان یونیوسرٹی کے برطرف کئے گئے ملازمین کے وفد سے گفتگو کررہے تھے، امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ جامعہ عبدالولی خان انتظامیہ نے ہزاروں خاندانوں کا معاشی قتل عام کیا اوران کایہ اقدام ناقابل معافی ہے، انہوں نے کہاکہ اے این پی لوگوں کو روزگار دینے کی پالیسی پر گامزن ہے غریب لوگوں کے منہ سے نوالہ چھینے والے کسی رورعایت کے حق دار نہیں، انہوں نے کہاکہ سابق حکومت نے نوجوانوں سے روزگار کے جھوٹے دعوے کئے اورجب ان سے کچھ نہ بنا تو’’ چوہے مار ‘‘ فیکٹریاں کھول کر پختون نوجوانوں کی تضحیک کی گئی، انہوں نے کہا کہ سابق حکومت کے چہیتوں کے اقدام کے پیچھے پختون دشمنی کے سوا کچھ نہیں، برطرف ملازمین 25جولائی تک صبرسے کام لیں صوبے کا اختیار ملتے ہی پہلے اقدام کے طورپر ان کی بحالی کے احکامات جاری کئے جائیں گے،۔

حکومت میں آ کر بے روزگاری کے خاتمے کیلئے ہر حد تک جائیں گے

 Party News  Comments Off on حکومت میں آ کر بے روزگاری کے خاتمے کیلئے ہر حد تک جائیں گے
Jun 302018
 

حکومت میں آ کر بے روزگاری کے خاتمے کیلئے ہر حد تک جائیں گے، امیر حیدر خان ہوتی

کپتان نے اپنی جماعت کے نظریاتی کارکنوں کی پیٹھ میں چھرا گھونپ کر ٹکٹ لوٹوں کو جاری کر دیئے ۔

سابق حکومت نے سرکاری خزانے کو بے دردی سے لوٹا ،اے این پی عوام کی محرومیوں کا ازالہ کرے گی۔

مرکز کے پاس باقی رہ جانے والے صوبے کے حقوق حاصل کر کے ترقی کے سفر کا آغاز کریں گے۔

خود روزگار سکیم کی کامیابی کیلئے نوجوانوں کو بلا سود قرضے فراہم کئے جائیں گے۔

شاہراہوں کی تعمیر اور پشاور میٹرو ترقیاتی منصوبوں میں سر فہرست ہونگے۔ نوشہرہ میں جلسہ عام سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ صوبہ معاشی طور پر دیوالیہ ہو چکا ہے اور آج اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں سے یہ بات ثابت ہو گئی ہے کہ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں کیلئے خزانے میں رقم موجود نہیں ہے ،اے این پی طویل عرصہ سے عوام کے علم میں یہ بات لاتی رہی ہے کہ صوبائی حکومت نے خزانہ لوٹ لیا ہے اور سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن کیلئے پیسہ نہیں ہے، کپتان کی پریشانی کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ انہوں نے پی ٹی آئی کے نظریاتی کارکنوں کو نظر انداز کر کے لوٹوں کو ٹکٹ جاری کئے ، فرد واحد کیلئے نہیں بلکہ قوم کی بقاء کیلئے اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے ، حکومت میں آ کر مرکز کے پاس رہ جانے والے صوبے کے حقوق حاصل کریں گے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے سی کالونی نوشہرہ این اے 25میں انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،، اے این پی کے امیدوار اور ضلعی صدر ملک جمعہ خان نے بھی اس موققع پر خطاب کیا ، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ سابق حکومت کی غیر ذمہ دارانہ اور غیر سنجیدہ پالیسیوں کی وجہ سے صوبہ مالی بحران کا شکار ہوا ، انہوں نے کہا کہ سابق وزیر اعلیٰ نے صوبے کے ساتھ ساتھ اپنے ہی حلقہ کے عوام کی تذلیل کی اور انہیں ان کے جائز حقوق سے محروم رکھا ، انہوں نے کہا کہ پنجاب میں بجلی کے منصوبے اور اورنج ٹرین جیسے منصوبے بن رہے ہیں ،سندھ میں تھرکول اور بلوچستان میں گوادر مکمل ہو رہا ہے جبکہ ہمارے صوبے میں سابق حکومت نے پشاور کو کھنڈرات میں تبدیل کر دیا ،ہر جانب تباہی کے آثارہیں ،انہوں نے کہا کہ اے این پی حکومت میں آ کر عوام کی محرومیوں کا ازالہ کرے گی ، ہر ضلع میں ایک یونیورسٹی اور ہر حلقہ میں ایک کالج کے وعدے کو عملی جامہ پہنائے گی ، مرکزی سے اپنے حقوق حاصل کریں گے اور ترقی کے نئے دور کا آغاز کریں گے، انہوں نے کہا کہ سابق صوبائی حکومت نے بے روزگاری کے خاتمے کیلئے گدھوں کی تجارت شروع کیاور نوجوانوں کو چوہے مار مہم پر لگا دیا گیا ، انہوں نے کہا کہ انتہائی افسوس کا مقام ہے کہ حکومت کی غیر سنجیدگی کی وجہ سے بے روزگاری اور مہنگائی میں اضافہ ہوا ، انہوں نے کہا کہ اے این پی کامیابی کے بعد بے روزگاری کے خاتمے پر توجہ دے گی اور نوجوانوں کو 10لاکھ تک بلاسود قرضے فراہم کرے گی تاکہ وہ اپنے لئے روزگار کے مواقع پیدا کر سکیں، بی آر ٹی اپنے ذاتی مقاصد کیلئے شروع کی گئی اور مفادات حاصل کر کے اسے ادھورا چھوڑ دیا گیا ، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ اے این پی حکومت میں آ کر بی آر ٹی مکمل کرے گی ،انہوں نے یاد دلایا کہ اے این پی نے اپنے دور حکومت میں حیات آباد سے چارسدہ روڈ تک رنگ روڈ کی بحالی کا کام کیا اور اب دوبارہ چمکنی تا چارسدہ روڈ اور سدرن بائی پاس کی تعمیر یقینی بنائیں گے تاکہ ارد گرد کے علاقوں کو لنک کیا جا سکے ، انہوں نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں پر زور دیا کہ الیکشن کی بھرپور تیاریاں جاری رکھیں اور عوام اپنے حقوق کے تحفظ اور اپنی آئندہ نسلوں کی بقا کیلئے اے این پی کو کامیاب کریں۔

ہمسایہ ممالک کے ساتھ بہتر تعلقات اور تجارت پر بھرپور توجہ دی جائے گی

 Party News  Comments Off on ہمسایہ ممالک کے ساتھ بہتر تعلقات اور تجارت پر بھرپور توجہ دی جائے گی
Jun 102018
 

ہمسایہ ممالک کے ساتھ بہتر تعلقات اور تجارت پر بھرپور توجہ دی جائے گی، میاں افتخار حسین

گزشتہ حکومت نے خزانہ خالی کر دیا جسے اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے۔

اقتدار میں آ کر مفاد عامہ پر خصوصی توجہ دینے کے ساتھ ساتھ بجلی کے منصوبوں پر سنجیدگی سے کام کیا جائے گا۔

باچا خان بابا کے سپاہی ہیں اور سیاست صرف انسانیت کی خدمت کی بنیاد پر ہی کرتے ہیں۔

گزشتہ حکومت نے عوام کو صرف نعروں پر ورغلایا جبکہ حقیقت میں ان کے پاس عوام کو دینے کیلئے کچھ نہیں تھا۔

پارٹی و ذیلی تنظیموں کے کارکن اپنی تمام توانائیاں بروئے کار لائیں ، خوشمقام میں انتخابی مہم کے دوران خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ الیکشن میں اے این پی واضح برتری کے ساتھ کامیابی حاصل کرے گی اور اقتدار میں آ کر تمام مفاد عامہ کے منصوبے عوام کے تعاون سے شروع کریں گے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے65خوشمقام میں انتخابی مہم کے دوران ایک اہم اجلاس اور بعد ازاں حجروں میں پارٹی عہدیداروں کے ساتھ ملاقات میں کیا ، اس موقع پر پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی سمیت مختلف جماعتوں کی سرکردہ شخصیات نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، میاں افتخار حسین نے شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ عوام کی الیکشن سے قبل جوق در جوق شمولیت اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ وہ اے این پی کو اپنے حقوق کا محافظ سمجھتے ہیں ، انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومت نے عوام کو صرف نعروں پر ورغلایا جبکہ حقیقت میں ان کے پاس عوام کو دینے کیلئے کچھ نہیں تھا ،انہوں نے کہا کہ اقتدار میں آنے کے بعد مفاد عامہ کو ترجیح دی جائے گی اور پانچ سال تک عوام جن محرومیوں کا شکار رہے ہیں ان کا ازالہ کیا جائے گا، میاں افتخار حسین نے کہا کہ خزانہ خالی ہے اور اے این پی تمام ایسے اقدامات کرے گی جس سے سرکاری خزانے کو اپنے پاؤں پر کھڑا کیا جا سکے ، انہوں نے کہا کہ صوبے کے حقوق کی جنگ ماضی میں بھی اے این پی نے لڑی اور اب دوبارہ اقتدار میں آ کر مرکز سے صوبے کے حقوق کا حصول یقینی بنایا جائے گا ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ صوبے کی تاریخ میں اتنے انقلابی اقدامات کسی دوسری جماعت نے نہیں کئے ، انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ کارکن الیکشن کی تیاریون میں اپنی بھرپور توانائیان صرف کریں ، اور پارٹی کا پیغام مؤثر اور مدلل انداز میں گھر گھر پہنچانے کیلئے میدان میں آئیں،انہوں نے کہا کہہمسایہ ممالک کے ساتھ بہتر تعلقات اے این پی کی ترجیح ہو گی اور ان کے ساتھ تجارت کو فروغ دیا جائے گا ،اس کے ساتھ ساتھ بجلی پیداوار کے منصوبوں پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔، انہوں نے کہا کہ ہم باچا خان کے سپاہی ہیں اور صرف عوامی مفاد اور انسانیت کی خدمت کے پیش نظر عملی سیاست کرتا ہوں ، انہوں نے کہا کہ قوم کی خدمت ہمارا نصب العین ہے اور یہی ہمارے ایمان کا حصہ ہے ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ ہم بلا رنگ و نسل اور بلا تفریق سب کی خدمت کریں گے۔

اے این پی نے شاہنواز خانزادہ اور احرار خٹک کی پارٹی رکنیت ختم کر دی

 May-2018, Party News  Comments Off on اے این پی نے شاہنواز خانزادہ اور احرار خٹک کی پارٹی رکنیت ختم کر دی
May 142018
 

اے این پی نے شاہنواز خانزادہ اور احرار خٹک کی پارٹی رکنیت ختم کر دی

پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنے والوں کیلئے اے این پی میں کوئی جگہ نہیں، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے پارٹی مخالف سرگرمیوں، متوازی پارٹی بنانے، پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنے اور آزاد حیثیت سے الیکشن میں حصہ لینے کے اعلان پر نوشہرہ کے احرار خٹک اور صوابی سے تعلق رکھنے والے شاہنواز خانزادہ کی بنیادی رکنیت ختم کر دی ہے ، جبکہ صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک نے اس کاباقاعدہ نوٹیفیکیشن اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری کر دیا ہے ۔
دریں اثنا صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے واضح طور پر کہا ہے کہ متذکرہ بالا دونوں افراد کا اب اے این پی سے کوئی تعلق نہیں ۔ پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنے والوں کیلئے اے این پی میں کوئی جگہ نہیں اور پارٹی کے دروازے ان پر بند ہیں، انہوں نے کہا کہ کارکن پارٹی آئین پر من وعن عمل کریں اور الیکشن مہم میں اپنے متعلقہ اضلاع میں نامزد امیدواروں کی انتخابی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔

 فلاحی ادارے ڈینگی سے متعلق شعور اجاگر کرنے کیلئے میدان میں آئیں

 Aug-2017, Party News  Comments Off on  فلاحی ادارے ڈینگی سے متعلق شعور اجاگر کرنے کیلئے میدان میں آئیں
Aug 252017
 

 فلاحی ادارے ڈینگی سے متعلق شعور اجاگر کرنے کیلئے میدان میں آئیں، میاں افتخار حسین

پشاور ( پ ر ) میاں راشد شہید فاؤنڈیشن کے چیئرمین میاں افتخار حسین نے تمام فلاحی اداروں اور این جی اوز سے اپیل کی ہے کہ ڈینگی سے متعلق آگاہی مہم کیلئے شہر بھر میں پھیل جائیں اور انسانیت کی خدمت کے جذبے کے تحت عوام میں شعور اجاگر کریں ، پشاور پریس کلب میں راشد شہید فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام ڈینگی سے متعلق آگاہی مہم بارے ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیاست اور پوائنٹ سکورنگ سے بالاتر اس وقت عوام میں شعور اجاگر کرنے کی ضرورت ہے تا کہ مستقبل میں قیمتی انسانی جانوں کو ضائع ہونے سے بچایا جا سکے ،اے این پی کی صوبائی جانئٹ سیکرٹری شگفتہ ملک، ملگری ڈاکٹران کے صدر ڈاکٹر سعید الرحمان، این وائی او کے صوبائی آرگنائزر سنگین خان،انٹامالوجسٹ ڈاکٹر فرمان،، پی ایس ایف کے مرکزی چیئرمین حق نواز خٹک اور سلمان یوسفزئی نے بھی خطاب کیا،میاں افتخار حسین نے کہا کہ جو بھی اس حوالے سے اپنی خدمات پیش کرے اس کو خراج تحسین پیش کیا جانا چاہئے ،تاہم اگر صوبائی حکومت اس بار ڈینگی سے نمٹنے کیلئے تیار نہیں تھی تو اسے مستقبل میں ایسے واقعات سے نمٹنے کیلئے خود کو تیار کرنا چاہئے جبکہ ڈاکٹروں کو بھی ٹریننگ دی جائے ، انہوں نے کہا کہ ہم نے اس حوالے سے ابتداء کر دی ہے اب مزید اداروں اور انفرادی طور پر بھی لوگوں کو ڈینگی سے متاثرہ افراد کی خدمت اور ان میں شعور اجاگر کرنے کی غرض سے آگے آنا چاہئے ، انہوں نے کہا کہ صوبے میں وسائل کی کمی نہیں اور سرکاری و غیر سرکاری ادارے سکولوں ، گلیوں ،محلوں میں پھیل جائیں تاکہ عوام کو مستقبل کیلئے آنے والے ھالات سے مقابلہ کرنے کیلئے تیار کیا جائے ، انہوں نے کہا کہ راشد شہید فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام ڈینگی سے متاثرہ علاقوں سمیت دیگر علاقوں میں بھی کل سے مچھر دانیوں اور لوشن کی تقسیم کا عمل شروع کیا جائے گا،ڈاکٹر سعید الرحمان نے اپنے خطاب میں کہا کہ ڈینگی لاروا کھڑے پانی کی وجہ سے جنم لیتا ہے جس کی ابتدائی علامات میں ، سردرد، بخار ، جسم پر سرخ نشانات، کمر اور جسم میں شدید درد اور بعض اوقات ناک سے خون آنے شروع ہو جاتا ہے ایسی صورتحال میں عوام کو چاہئے کہ وہ فوری طور پر ہسپتال کا رخ کریں ، انہوں نے خہا کہ ھکومت اس حوالے سے اپنی ذمہ داری پوری کرے اور صفائی کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھائے۔

عوامی نیشنل پارٹی کی منشور کمیٹی کا اجلاس 26جولائی کو طلب کر لیا گیا

 July 2017, Latest, Party News  Comments Off on عوامی نیشنل پارٹی کی منشور کمیٹی کا اجلاس 26جولائی کو طلب کر لیا گیا
Jul 202017
 

 عوامی نیشنل پارٹی کی منشور کمیٹی کا اجلاس 26جولائی کو طلب کر لیا گیا۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل اور منشور کمیٹی کے چیئرمین میاں افتخار حسین نے 2018کے انتخابات کیلئے بنائی گئی منشور کمیٹی کا اجلاس 26جولائی2017بروزبدھ دوپہر ایک بجے باچا خان مرکز میں طلب کر لیا ہے جس میں ملک بھر سے منشور کے حوالے سے موصول ہونے والی تجاویز کا جائزہ لیا جائے گا، کمیٹی کے سیکرٹری سردار حسین بابک نے تمام ممبران سے اجلاس میں بروقت شرکت کی اپیل کی ہے۔