ضمنی الیکشن میں کامیابی نے25جولائی کی دھاندلی پر مہر ثبت کر دی

 Oct-2018  Comments Off on ضمنی الیکشن میں کامیابی نے25جولائی کی دھاندلی پر مہر ثبت کر دی
Oct 172018
 

ضمنی الیکشن میں کامیابی نے25جولائی کی دھاندلی پر مہر ثبت کر دی،امیر حیدر خان ہوتی
پارٹی کو مزید فعال اور متحرک کرنے کی جدوجہد جاری رہے گی۔
پارٹی تنظیمیں عوامی رابطوں میں تیزی لائیں اور عوام دشمن حکومتی پالیسیاں عوام تک پہنچائیں۔
جمہوریت کی بقا اور عوام کے حقوق کیلئے اے این پی کی جدوجہد تاریخ کا حصہ ہے۔
مرکزی و صوبائی حکومتوں کی جانب سے ٹیکسوں میں اضافے اور نئے ٹیکسوں کا نفاذ عوام دشمنی ہے۔
عوام 21اکتوبر کو ہونے والے پشاور کے ضمنی الیکشن میں اے این پی کو ووٹ دیں۔صوبائی کابینہ کے اجلاس سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے ایک بار پھر اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ پارٹی کو مزید فعال اور متحرک کرنے کی جدوجہد جاری رہے گی ، باچا خان مرکز پشاور میں صوبائی کابینہ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ضمنی الیکشن میں پارٹی کی کامیابی اس بات کی عکاس ہے کہ25جولائی کے انتخابات میں بدترین اور منظم دھاندلی کی گئی ، انہوں نے کہا کہ ہم باچا خان بابا کے پیروکار ہیں اور اپنا سیاسی سفر ہر صورت جاری رکھیں گے،امیر حیدر ہوتی نے کہا کہ جمہوریت کی بقا اور عوام کے حقوق کیلئے اے این پی کی جدوجہد تاریخ کا حصہ ہے، انہوں نے کہا کہ پارٹی کی تمام تنظیمیں و ذیلی تنظیمیں عوامی رابطوں میں تیزی لائیں اور حکومت کی عوام دشمن پالیسیاں اور فیصلے عوام تک پہنچائیں ،انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ مرکزی بجٹ میں خیبر پختونخوا کو یکسر نظر انداز کیا گیا ہے اور یہی وہ تبدیلی تھی جس کے نام پر عوام کو دھوکہ دیا گیا ۔انہوں نے مرکزی و صوبائی حکومتوں کی جانب سے ٹیکسوں میں اضافے اور نئے ٹیکسوں کے نفاذ کو عوام دشمنی قرار دیتے ہوئے کہا کہ تبدیلی کے نام نہاد نعرے لگانے والوں نے اپنے پہلے 50دنوں میں ہی عوام کی چیخیں نکال دی ہیں ، انہوں نے کہا کہ عوام 21اکتوبر کو ہونے والے پشاور کے ضمنی الیکشن میں مہنگائی اور ٹیکسوں کے نفاذ کے جواب میں حکمران جماعت کے خلاف اے این پی کے امیدوار کو کامیاب کرائیں اور موجودہ حکومتوں کو عوام دشمن فیصلے واپس لینے پر مجبور کریں، اس موقع پر صوبائی کابینہ کے ارکان بھی موجود تھے، اجلاس میں پارٹی کے انٹرا پارٹی الیکشن کے حوالے سے بھی تفصیلی بحث کی گئی۔

حکومت6ہزار سے زائد اسامیاں ختم کرنے کی وضاحت کرے،سردار حسین بابک

 Oct-2018  Comments Off on حکومت6ہزار سے زائد اسامیاں ختم کرنے کی وضاحت کرے،سردار حسین بابک
Oct 172018
 

حکومت6ہزار سے زائد اسامیاں ختم کرنے کی وضاحت کرے،سردار حسین بابک
آسامیاں خالی پڑی تھیں تو اس سے خزانے کو ایک ارب کی بچت کسطرح ہوسکتی ہےْ؟
حکومتی اقدام سے ایک کروڑ بیروزگاروں کو روزگار دینے کا وعدہ دم توڑگیاہے۔
تبدیلی آشکارا ہوتی جا رہی ہے،حکمران عوامی مشکلات میں اضافہ کرتے جارہے ہیں۔
پی ٹی آئی نے سابق دور حکومت میں صوبے کو کئی سو ارب کا مقروض کر دیا ۔
پٹرول،گیس اور بجلی کے نرخوں میں روزانہ اضافے نے غریب عوام کو ذہنی مریض بنادیاہے۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے صوبائی حکومت کی طرف سے سرکاری محکموں میں 6500 آسامیاں ختم کرنے کے فیصلے کو روزگار دشمن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اقدام سے پی ٹی آئی کے منشور میں ایک کروڑ بیروزگاروں کو روزگار دینے کا وعدہ دم توڑگیاہے ، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ الیکشن سے پہلے اور اقتدار میں آنے کے بعد تبدیلی سرکار کے قول و فعل میں تضاد بچے بچے پر آشکارہ ہوگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت وضاحت کرے کہ یہ آسامیاں کیوں ختم کی جارہی ہے؟،ایک طرف روزگار دینے کے وعدے اور دوسری طرف روزگار چھیننے کے فیصلے ان کی تبدیلی ہے۔انہوں نے کہا کہ عجیب منطق ہے کہ اگر یہ ساڑھے چھ ہزار آسامیاں خالی پڑی تھیں تو اس سے خزانے کو ایک ارب کی بچت کسطرح ہوسکتی ہے،لہذا عوام کی آنکھوں میں دھول جھانکنے کے بجائے عوام کو حقیقت بتائی جائے اور مشکلات میں اضافے کی بجائے مشکلات کو کم اور ختم کرنے کیلئے اپنے کام پر توجہ دے۔انہوں نے کہا کہ صوبہ مالی طور پر دیوالیہ ہے،تبدیلی سرکار نے اپنے پچھلے دور حکومت میں صوبے کو کئی سو ارب کا مقروض بنایا ہے اور ہرسال اُس قرضے پر سود ادا کرنا پڑرہا ہے جس کی وجہ سے صوبے میں ترقیاتی عمل ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے،بیروزگاری میں اضافہ ہورہا ہے اور تبدیلی سرکار کی مرکزی حکومت پٹرول،گیس اور بجلی کے نرخوں میں روزانہ اضافے نے غریب عوام کو ذہنی مریض بنادیاہے۔انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی طرف سے صوبے میں کسی ایک منصوبے کیلئے بجٹ مختص نہ کرنا خیبر پختونخواکے ساتھ زیادتی ہے،قبائیلی اضلاع کیلئے مرکزی حکومت کی طرف سے اعلان کردہ سو ارب روپے کے ترقیاتی بجٹ کا صوبے کے بجٹ میں ذکر نہ ہونا ظلم اور زیادتی ہے۔

پارٹی مخالف سرگرمیاں۔اے این پی باجوڑ کے شیخ جہانزادہ کو شوکاز نوٹس جاری

 Oct-2018  Comments Off on پارٹی مخالف سرگرمیاں۔اے این پی باجوڑ کے شیخ جہانزادہ کو شوکاز نوٹس جاری
Oct 172018
 

پارٹی مخالف سرگرمیاں۔اے این پی باجوڑ کے شیخ جہانزادہ کو شوکاز نوٹس جاری

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے باجوڑ سے تعلق رکھنے والے شیخ جہانزادہ کو پارٹی کے نامزد امیدوار کے خلاف مخالف امیدوار کی حمایت اور اس کی انتخابی مہم چلانے کی پاداش میں شوکاز نوٹس جاری کر تے ہوئے تین یوم کے اندر تحریری جواب طلب کر لیا ہے ۔

اے این پی شانگلہ کے ضلعی صدر کو پارٹی سرگرمیاں جاری رکھنے کی ہدایت

 Oct-2018  Comments Off on اے این پی شانگلہ کے ضلعی صدر کو پارٹی سرگرمیاں جاری رکھنے کی ہدایت
Oct 172018
 

اے این پی شانگلہ کے ضلعی صدر کو پارٹی سرگرمیاں جاری رکھنے کی ہدایت

حاجی سید فرین نے تحریری جواب میں پارٹی فیصلوں پر سختی سے کاربند رہنے کی یقین دہانی کرا دی۔
پارٹی کا بنیادی کارکن اور تادم مرگ پارٹی کے وفادار رہتے ہوئے تمام پالیسیوں پر کاربند رہوں گا۔
اے این پی اصولی جماعت ہونے کے ناطے تمام کارکنوں کا صدق دل سے احترام کرتی ہے، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے ضلع شانگلہ کے صدر حاجی سید فرین کو پارٹی سرگرمیاں جاری رکھنے کی ہدایت کر دی ،یاد رہے کہ ضلعی صدر کو ضمنی ا لیکشن کے حوالے سے صوبائی صدر نے شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے تین یوم کے اندر ان سے جواب طلبی کی تھی جس پر حاجی سید فرین نے تحریری جواب میں پارٹی فیصلوں و پالیسیوں پر سختی سے کاربند رہنے اور پارٹی کے ساتھ وابستگی کی یقین دہانی کرائی ، صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے شانگلہ کی تنظیم کی موجودگی میں مستقبل میں ایسا ماحول پیدا کرنے سے گریز کی ہدایت کرتے ہوئے ضلعی صدر کو پارٹی سرگرمیاں جاری رکھنے کی ہدایت کی ، حاجی سید فرین نے یقین دہانی کرائی کہ وہ پارٹی کے بنیادی کارکن ہیں اور تادم مرگ پارٹی کے وفادار رہتے ہوئے تمام پالیسیوں اور اصولوں پر کاربند رہیں گے ، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ اے این پی اصولی پارٹی ہے اور اپنے اصولوں پر چلتے ہوئے تمام کارکنوں کا دل سے احترام کرتی ہے اور امید کرتے ہیں کہ تمام کارکن پارٹی آئین اور اصولوں پر عمل کرتے رہیں گے۔

سانحہ یکہ توت کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے

 Oct-2018  Comments Off on سانحہ یکہ توت کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے
Oct 172018
 

سانحہ یکہ توت کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے، ثمر ہارون بلور

ہارون بلور کو مارنے والے سین پر نظر نہیں آئے ایف آئی آر کس کے خلاف درج کراتے؟

عوام نے ووٹ کے ذریعے بدلہ لے لیا، میری جیت دراصل ہارون بلور شہید کی فتح ہے۔

پاکستان میں سیاست کو گالی بنایا گیا، انتخابات میں تمام حکومتی مشینری ہمارے خلاف استعمال کی گئی ۔

عوام دو ماہ میں تبدیلی کی حقیقت جان گئے، الزامات لگانے اور حکومت چلانے میں بہت فرق ہے۔

عوام کے بنیادی مسائل کے حل کیلئے پارلیمنٹ میں آواز اٹھاؤں گی۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کی نو منتخب رکن اسمبلی اور شہید ہارون بلور کی بیوہ ثمر ہارون بلور نے سانحہ یکہ توت کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن کے قیام کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسمبلی سمیت تمام فورمز پر اس کیلئے آواز اٹھائی جائے گی، اپنے ایک بیان میں انہوں نے پارٹی قائدین ،عہدیداروں اور کارکنوں سمیت متحدہ اپوزیشن میں شامل جماعتوں کے رہنماؤں کا شکریہ کیا اور کہا کہ عوام اور پارٹی کارکنوں کی انتھک محنت پی کے78کی نشست جیتنے کا سبب بنی، انہوں نے کہا کہ پی کے78میں میری جیت دراصل ہارون بلور شہید کی فتح ہے، ہارون بلور کو مارنے والے سین پر نظر نہیں آئے ایف آئی آر کس کے خلاف درج کراتے،ثمر بلور نے کہا کہ عوام نے شہید ہارون بلور کے قتل کا بدلہ بیلٹ کے ذریعے لے لیا ہے ،انہوں نے کہا کہ انتخابات میں تمام حکومتی مشینری ہمارے خلاف استعمال کی گئی اس کے باوجود عوام نے ضمنی الیکشن میں بلور خاندان پر اعتماد کا اظہار کیا، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیاست کو گالی بنا دیا گیا ہے اور میں اب بھی اپنے خاندان والوں کو دہشت گردی کا نشانہ سمجھتی ہوں ، انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ عوام کے بنیادی مسائل کے حل کیلئے پارلیمنٹ میں آواز اٹھاؤں گی ، انہوں نے کہا کہ حکومت دو ماہ میں بے نقاب ہو گئی ہے اور عوام جان چکے ہیں کہ الیکشن سے پہلے صرف جھوٹے اور فریبی نعرے لگائے گئے حالانکہ حقیقت اس کے بر عکس ہے ، انہوں نے کہا کہ مہنگائی ، ٹیکسوں میں اضافے اور نئے ٹیکسوں کے نفاذ نے عوام کو بری طرح متاثر کیا ہے ،ثمر بلور نے کہا کہ لوگوں سے روزگار اور گھر دینے دعوے ہوا ہو چکے ہیں ، انہوں نے کہا کہ الزامات لگانے اور حکومت چلانے میں بہت فرق ہے، عوام سے تبدیلی اور نئے پاکستان کے نام پر ووٹ لے کر اب چندے بھی مانگے جا رہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ ملک میں بجلی اور گیس کی قیمتیں تاریخ کی بلند ترین سطح پر آ چکی ہیں اور اب عنقریب روٹی بھی غریب عوام کی دسترس سے باہر ہونے والی ہے۔

 

دھاندلی کی تحقیقات کیلئے اپوزیشن جماعتوں کے مطالبات درست ہیں

 Oct-2018  Comments Off on دھاندلی کی تحقیقات کیلئے اپوزیشن جماعتوں کے مطالبات درست ہیں
Oct 172018
 

دھاندلی کی تحقیقات کیلئے اپوزیشن جماعتوں کے مطالبات درست ہیں، میاں افتخار حسین
عمران نے دھرنے کے دوران دھاندلی کے حوالے سے من گھڑت مطالبات کئے تھے۔
جن چار حلقوں کیلئے دھرنا دیا گیا وہ آج بھی مسلم لیگ ن کے پاس ہیں۔
ٍٍ فوج اور پولیس اہلکاروں کا پولنگ سٹیشنز کے اندر کوئی عمل دخل نہیں ہونا چاہئے۔
عام انتخابات میں نتائج تبدیل کرنے والی قوتوں پر ضمنی الیکشن میں عوامی پریشر تھا۔
قبروں کے ٹرائل سے پہلے زندہ لوگوں کا بلا امتیاز احتساب ضروری ہے۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے دھاندلی کی تحقیقات کیلئے پارلیمانی کمیٹی کے قیام کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ پارلیمانی کمیٹی انگوٹھوں کی تصدیق ،نتائج کو روکنے اور فوج کی تعیناتی کے پہلوؤں سے سے تحقیقات کا آغاز کرے گی ، اپنے ایک بیان میں انہوں نے عام انتخابات اور ضمنی الیکشن میں پولنگ سٹیشنوں کے اندر فوجی اہلکاروں کی تعیناتی کو ایک بار پھر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ فوج اور پولیس کو اپنی ڈیوٹی پر توجہ مرکوز کرنی چاہئے پولنگ سٹیشن کے اندر ان کی موجودگی کوئی معنی نہیں رکھتی،انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے عام انتخابات میں نتائج تبدیل کئے انہوں نے ضمنی الیکشن میں بھی وہی کوششیں کیں تاہم بعض حلقوں میں وہ کامیاب نہیں ہوسکے،انہوں نے کہا کہ عوام کے پریشر اور بیداری کے باعث دھاندلی کی کوششیں کامیاب نہیں ہو سکیں میاں افتخار حسین نے کہا کہ صوبے میں ا بتر سیاسی راوایت کی خاطر عمران خان کو پی کے78پر اپنا امیدوار نہیں کھڑا کرنا چاہئے تھا ،انہوں نے کہا کہ ملک میں زندہ لوگوں کا احتساب نہیں ہو سکا اور اب مردوں کے احتساب کے حوالے بازگشت تعجب خیز ہے ، انہوں نے کہا کہ اے این پی بلاامتیاز احتساب پر یقین رکھتی ہے اور اگر احتسابی عمل ماضی سے شروع ہوا تو اے این پی کا اپنے اکابرین کے کردار کی وجہ سے مزید بول بالا ہوگا۔

عوامی نیشنل پارٹی نے صوبائی بجٹ مسترد کر دیا 

 Oct-2018  Comments Off on عوامی نیشنل پارٹی نے صوبائی بجٹ مسترد کر دیا 
Oct 162018
 

عوامی نیشنل پارٹی نے صوبائی بجٹ مسترد کر دیا 
نئے ٹیکسوں کے نفاذ اور ٹیکسوں میں اضافے سے غریب عوام پر مزید بوجھ بڑھے گا۔
حکومت نے اقربا پروری کی انتہا کرتے ہوئے صوبے کے محدود وسائل اپنوں میں تقسیم کر دیئے۔
صوبے کا حصہ ہونے کے باوجود قبائلی اضلاع کیلئے بجٹ مختص نہ کرکے کیا پیغام دیا گیا؟
الفاظ کے ہیر پھیر کو بجٹ قرار نہیں دیا جا سکتا،تعلیم کیلئے کم پیسہ مختص کرنا تعلیم دشمنی ہے۔
حکومت نے اپنے سابق دور میں صوبے کو دیوالیہ کیا ،ملبہ کسی اور پر نہیں ڈالا جا سکتا۔سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی نے صوبائی بجٹ مسترد کرتے ہوئے اسے عوام کے ساتھ زیادتی قرار دیا ہے ، پارٹی کے صوبائی پارلیمانی لیڈر و جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ صوبائی بجٹ میں نئے ٹیکسوں کے نفاذ اور ٹیکسوں میں اضافے سے غریب عوام پر مزید بوجھ بڑھے گا،اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے صوبے کی پسماندگی اور ضرورت کو بالائے طاق رکھتے ہوئے صوبے کے محدود وسائل اپنوں میں تقسیم کر دیئے ہیں،انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع کیلئے صوبے کا حصہ ہونے کے باوجود ان علاقوں کیلئے بجٹ مختص نہ کرکے کیا پیغام دیا گیا ہے؟ انہوں نے کہا کہ غریب عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کوئی منصوبہ شامل نہیں کیا گیا ، قبائلی اضلاع زیادہ توجہ کی مستحق ہے لیکن انہیں یکسر نظر انداز کرکے ناانصافی کا مظاہرہ کیا گیا ، الفاظ کے ہیر پھیر کو بجٹ قرار نہیں دیا جا سکتا،انہوں نے کہا کہ تعلیم کیلئے کم پیسہ اور خصوصاً نئے تعلیمی اداروں کی تعمیر کیلئے رقم مختص نہ کرنا تعلیم دشمنی ہے۔انہوں نے کہا کہ صوبے کے چھوٹی کاروباری سرگرمیوں پر ٹیکسوں کا نفاذ مہنگائی کے اس دور میں زیادتی ہے ،سردار بابک نے کہا کہ کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دینے اور حوصلہ افزائی کیلئے قرضوں میں چھوٹ ناگزیر ہے، انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اپنی ناکامی کا ملبہ کسی اور پر نہیں ڈال سکتی کیونکہ انہی کی پچھلی حکومت نے صوبے کو مالی طور پر دیوالیہ کر دیا ہے۔