نگران حکومت مخصوص سیاسی جماعت کی بی ٹیم کا کردار ادا کر رہی ہے

 June-2018  Comments Off on نگران حکومت مخصوص سیاسی جماعت کی بی ٹیم کا کردار ادا کر رہی ہے
Jun 302018
 

 

نگران حکومت مخصوص سیاسی جماعت کی بی ٹیم کا کردار ادا کر رہی ہے، اسفندیار ولی خان

ہم شفاف انتخابات کے حق میں ہیں ، الیکشن متنازعہ ہوئے تو اس کے نتائج بھیانک ہونگے۔

ذاتی مفادات کیلئے سیاست قوم کے ساتھ دھوکہ اور بے وفائی ہے ۔

ہمیں اقتدار کی نہیں صرف قوم کے مستقبل کی فکر ہے، کیو ڈبلیو پی کا پختونوں کی سیاست سے کوئی تعلق نہیں۔

اے این پی نے پیراشوٹ امیدواروں کی بجائے نظریاتی کارکنوں کو ٹکٹ جاری کئے ۔
حکومت میں آ کر ہر ضلع میں ایک یونیورسٹی اور ہر حلقہ میں کالج کا وعدہ ترجیحی بنیادوں پر پورا کیا جائے گا۔

کالاباغ ڈیم کا ایشو اٹھا کر حالات خراب کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے ، ترنگزئی میں شمولیتی جلسہ سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ ہم شفاف انتخابات کے حق میں ہیں اور اگر الیکشن متانزعہ ہوئے تو نتائج بھیانک ہونگے ، مختلف حلقوں میں تاحال ترقیاتی کام جاری ہیں جو الیکشن کمیشن کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے ترنگزئی چارسدہ میں شمولیتی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ نگران حکومت آزاد اور شفاف الیکشن نہیں کرانا چاہتی اور ایک مخصوص سیاسی جماعت کی بی ٹیم کے طور پر اس کی انتخابی مہم چلا رہی ہے ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ ذاتی مفادات کیلئے سیاست قوم کے ساتھ دھوکہ اور بے وفائی ہے ، ہمیں اقتدار کی نہیں صرف قوم کے مستقبل کی فکر ہے ، انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی دھجیاں ارانے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جانی چاہئے ، انہوں نے کہا کہ کیو ڈبلیو پی کا پختونوں کی سیاست سے کوئی تعلق نہیں رہا ،انہوں نے کہا کہ بنی گالہ میں ٹکٹوں کی تقسیم کے حوالے سے جو ہنگامے ہوئے وہ دنیا جانتی ہے ، اے این پی واحد سیاسی پارٹی ہے جس نے عوامی رائے کا احترام کرتے ہوئے کارکنوں کے مشورے سے ٹکٹ جاری کئے اور دیگر جماعتوں کی طرح پیرا شوٹ امیدواروں کو میدان میں نہیں اتارا ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ گزشتہ سینیٹ انتخابات میں سوائے اے این پی کے ہر جماعت کے ممبران فروخت ہوئے ،انہوں نے کہا کہ پانچ سال کے دوران سابق صوبائی حکومت نے قوم کے بچوں پر تعلیم کے دروازے بند رکھے ، جبکہ قوم کی ترقی کیلئے تعلیم اور ذرائع آمدورفت بنیادی اہمیت کے حامل ہیں ، انہوں نے کہا کہ اے این پی نے اپنے دور میں تعلیم اور مواصلات پر بھرپور توجہ مرکوز رکھی اور اس کے ثمرات عوام تک بھی پہنچے ، انہوں نے کہا کہ انتخابات میں اے این پی کی کامیابی یقینی ہے اور حکومت میں آ کر ہر ضلع میں ایک یونیورسٹی اور ہر حلقہ میں کالج کا وعدہ ترجیحی بنیادوں پر پورا کیا جائے گا۔کالاباغ ڈیم کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے واضح کیا کہ کچھ لوگ اس اہم ایشو کو چھیڑ کر حالات بگاڑنا چاہتے ہیں ،کالاباغ ڈیم متانازعہ ایشو ہے اور تین صوبے اس کی تعمیر کے خلاف صوبائی اسمبلیوں میں قرار داد پیش کر چکے ہیں ، انہوں نے کہا کہ پنجاب کی خوشحالی کی قیمت پر پختونوں کی تباہی کی اجازت کسی صورت نہیں دیں گے،انہوں نے کہا کہ واپڈا متبادل کے طور پر بھاشا ڈیم تعمیر کرے جس سے بجلی اور پانی کے مسائل حل ہونے کے ساتھ ساتھ تربیلا کی عمر میں بھی 25سال بڑھ جائے گی ،

اے این پی کا مقابلہ نظریاتی سیاست سے نابلد لوگوں کے ساتھ ہے، اسفندیار ولی خان

 June-2018  Comments Off on اے این پی کا مقابلہ نظریاتی سیاست سے نابلد لوگوں کے ساتھ ہے، اسفندیار ولی خان
Jun 292018
 

اے این پی کا مقابلہ نظریاتی سیاست سے نابلد لوگوں کے ساتھ ہے، اسفندیار ولی خان

ایمل ولی کے مقابلے میں جماعت اسلامی کاامیدوار زندگی بھر اسمبلی نہیں دیکھ سکے گا۔

اے این پی کے بغیر تمام سیاسی جماعتوں نے پیراشوٹ امیدواروں کو ٹکٹ جاری کئے ۔

اقتدار کے مزے لوٹنے والوں کو حکومتیں ختم ہونے کے بعد اسلام خطرے میں نظر آنے لگا ہے۔

اے این پی کے خاتمے کی باتیں کرنے والے باچا خان مرکز میں کی گئی پریس کانفرنس یاد رکھیں۔

انتخابات میں اے این پی کی کامیابی یقینی ہے ، میرہ نستہ پی کے58میں انتخابی جلسہ عام سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ چارسدہ میں عوامی نیشنل پارٹی کا مقابلہ ان لوگوں سے ہے جو نظریاتی سیاست کے الف ب سے بھی واقف نہیں،ایمل ولی کے مقابلے میں جماعت اسلامی سے سامنے آنے والا امیدوار زندگی بھر اسمبلی نہیں دیکھے گا،مولانا فضل الرحمان کو اسلام سے زیادہ حکومت کی فکر لاحق ہے،اے این پی کے خاتمے کی باتیں کرنے والے جماعت اسلامی کے امیر باچا خان مرکز میں پریس کانفرنس کر چکے ہیں جس میں سینیٹ انتخابات مین اتحاد پر انہوں نے اے این پی کا شکریہ ادا کیا ، انہون نے کہا کہ سیاست مین منافقت کیلئے کوئی جگہ نہیں،الیکشن میں اے این پی کیلئے میدان خالی ہے اور انتخابات میں کامیابی کے سوا دوسرا کوئی آپشن نہیں ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے58میرہ نستہ چارسدہ میں انتخابی مہم کے سلسلے میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اپنے خطاب میں انہوں نے مزید کہا کہ انتخابی مہم زور و شور سے جاری ہے البتہ پارٹی عہدیدار اور تمام کارکن جرگے کریں اور پارٹی کا پیغام گھر گھر پہنچائیں،انہوں نے کہا کہ پانچ سال تبدیلی کے نعروں میں حقیقت نہیں تھی پشاور کو کھنڈرات میں تبدیل کر کے تبدیلی لائی گئی،تبدیلی والوں نے صرف پنجاب کی سیاست پر توجہ مرکوز رکھی ،کپتان پانچ سال تک جنہیں کوستے رہے انہی کو صاف شفاف کر کے ٹکٹ جاری کر دیئے یہی وہ تبدیلی ہے جس کی توقع کی جا سکتی تھی ، انہوں نے کہا کہاے این پی کے بغیر باقی تمام جماعتون نے ان امیدواروں کو ٹکٹ دیئے جو پیراشوٹ کے ذریعے دوسری جماعتوں سے آئے ، انہوں نے کہا کہ پانچ سال تک مرکز اور صوبے میں اقتدار کے مزے والوں کو حکومتیں ختم ہونے کے بعد اسلام خطرے میں نظر آنے لگا ہے اوراسلام کے نام پر اسلام آباد کیلئے تگ و دو شروع کر دی گئی ہے ، اسفندیار ولی خان نے کہا کہ سراج الحق صوبے میں پی ٹی آئی کے کندھے پر جبکہ مرکز میں مولانا وفاقی حکومت کا حصہ رہے اس وقت اسلام بھی محفوظ تھا ، فاٹا اصلاحات کا بل پیش ہونے کو تھا جب مولانا نے نواز شریف کو فون کر کے بل رکوا دیا لیکن اسلامی نظام کے نفاذ کیلئے انہیں کبھی فون نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ تمام عہدیدار اور کارکن بھرپور مہم چلائیں ،25جولائی کا سورج اے این پی کی کامیابی کی نوید لے کر طلوع ہو گا۔

تیس سال اقتدار میں رہنے والوں کو آج خیبر پختونخوا کے عوام کی یاد ستانے لگی

 June-2018  Comments Off on تیس سال اقتدار میں رہنے والوں کو آج خیبر پختونخوا کے عوام کی یاد ستانے لگی
Jun 292018
 

تیس سال اقتدار میں رہنے والوں کو آج خیبر پختونخوا کے عوام کی یاد ستانے لگی ، امیر حیدر خان ہوتی 
نواز شریف تین بار وزیر اعظم رہے لیکن خیبر پختونخوا کی ترقی و عوام کی خوشحالی سے بے خبر رہے ۔
سیاست سے کرپشن کے خاتمے کے دعوے کرنے والوں نے ضمیر فروشی ا کو فروغ دیا۔
پی ٹی آئی نے لوٹوں کی فوج اکٹھی کر کے ٹکٹ جاری کئے، پشاور کی تباہی کے ذمہ دار سابق وزیر اعلیٰ ہیں ۔
اقتدار میں آ کر پشاور کی عظمت رفتہ بحال کریں گے ، بی آر ٹی منصوبہ اے این پی مکمل کرے گی۔
گدھوں کی تجارت اور چوہے مار مہم کی بجائے بے روزگاری کے خاتمے کیلئے جامع پلان لے کر آئیں گے۔
پچیس جولائی کو فتح کے پروانے کارکنوں کے ہاتھ میں ہونگے۔ این اے 27چارپریزہ میں جلسہ عام سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیرحیدرخان ہوتی نے کہاہے کہ خیبر پختونخوا کو پنجاب بنانے کے دعوے کرنے والوں نے تیس سالہ اقتدار میں اس صوبے کو نظر انداز کئے رکھا اور آج الیکشن کی آمد سے قبل عوام کو ورغلانے کیلئے پھر سے اسی نعرے کے ساتھ میدان میں نکل آئے ہیں ،انتخابی مہم میں اے این پی کے امیدواروں کی پوزیشن مستحکم ہے اور کامیابی اے این پی کا مقدر ہے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے این اے27 چارپریزہ چوک میں انتخابی مہم کے دوران منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، پی کے 67کے امیدوار ملک نسیم خان نے بھی جلسہ سے خطاب کیا ، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ سیاست سے ضمیر فروشی اور کرپشن کے خاتمے کے دعوے کرنے والوں نے سب زیادہ ضمیر فروشی اور کرپشن کو فروغ دیا ،پی ٹی آئی نے لوٹوں کی فوج بھرتی کر کے ٹکٹ جاری کئے ،اے این پی واحد سیاسی جماعت ہے جس نے عوامی رائے کا احترام کرتے ہوئے کارکنوں کے مشورے سے ٹکٹ دیئے ،انہوں نے کہا کہ پشاور کی تباہی کے ذمہ دار سابق وزیر اعلیٰ ہیں جس نے اپنے ذاتی مفادات کی خاطر شہر کو آثار قدیمہ میں تبدیل کر دیا ، انہوں نے کہا کہ اقتدار میں آ کر پشاور کی عظمت رفتہ بحال کریں گے اور بی آر ٹی منصوبہ اے این پی مکمل کرے گی،حکومت میں آ کر گزشتہ پانچ سالہ محرومیوں کا ازالہ کریں گے ، صوبے کے عوام باچاخانی چاہتے ہیں، امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ صوبے کے چیف ایگزیکٹو نے پانچ سال تک دھرنوں کی سیاست کی اور عوامی مسائل کو پس پشت ڈالے رکھا جس کا خمیازہ غریب عوام کو بھگتنا پڑا ، انہوں نے کہا کہ پنجاب میں سی پیک ،سندھ میں تھرکول اور بلوچستان میں گوادر جیسے منصوبے شروع کئے گئے جبکہ یہاں صوبائی حکومت گدھوں کی تجارت میں لگ گئی ، بے روزگاری کے خاتمے کیلئے نوجوانوں کو چوہے مار مہم پر لگا دیا گیا ، انہوں نے کہا کہ انتہائی افسوس کا مقام ہے کہ حکومت کی غیر سنجیدگی کی وجہ سے بے روزگاری اور مہنگائی میں اضافہ ہوا ، انہوں نے کہا کہ اے این پی کامیابی کے بعد بے روزگاری کے خاتمے پر توجہ دے گی اور نوجوانوں کو 10لاکھ تک بلاسود قرضے فراہم کرے گی تاکہ وہ اپنے لئے روزگار کے مواقع پیدا کر سکیں ، انہوں نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں پر زور دیا کہ الیکشن کی بھرپور تیاریاں جاری رکھیں اور عوام اپنے حقوق کے تحفظ اور اپنی آئندہ نسلوں کی بقا کیلئے اے این پی کو کامیاب کرئیں، انہوں نے کہا کہ اقتدارمیں آکرنہ صرف خالی خزانہ بھریں گے بلکہ ترقی کا رکا ہوا پہیہ دوبارہ چلائیں گے، بیرونی سرمایہ کاروں کو لاکر کارخانے لگائیں گے، جنوبی اضلاع میں آئل ریفارمری ،گیس سے بجلی منصوبوں کے ساتھ ساتھ چھوٹے ہائیڈل منصوبے شروع کریں گے، انہوں نے کارکنوں پر زور دیا کہ وہ انتخابی مہم میں مزید تیزی لائیں اور25جولائی کی شام فتح کے پروانے سب کے ہاتھ میں ہوں ۔

وفاداریاں تبدیل کرنے والوں کی سیاست کا دور گزر چکا ہے، میاں افتخار حسین

 June-2018  Comments Off on وفاداریاں تبدیل کرنے والوں کی سیاست کا دور گزر چکا ہے، میاں افتخار حسین
Jun 292018
 

وفاداریاں تبدیل کرنے والوں کی سیاست کا دور گزر چکا ہے، میاں افتخار حسین
ہمارے جلسوں میں رکاوٹ ڈالنے والے 25جولائی کے بعد عوام سے منہ چھپاتے پھریں گے۔
قوم کی خدمت ہمارا نصب العین ہے ،بلا رنگ و نسل اور بلا تفریق سب کی خدمت کریں گے ۔
پی کے65کے سابق رکن اسمبلی نے پانچ سال تک اسمبلی میں ایک لفظ تک نہیں بولا۔
حکومت میں آ کر اجمل خٹک پولی ٹیکنیک انسٹی ٹیوٹ واپس لے آئیں گے۔
لوگوں کو ورغلانے کیلئے وسائل کا بے دریغ استعمال کیا جا رہا ہے۔
بیورکریسی کی تقرریوں اور تبادلوں پر تاحال سوالیہ نشان ہے، خوشمقام میں انتخابی جلسہ عام سے خطاب 

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری اور پی کے65کے امیدوار میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ کرسی کی سیاست اور وفاداریاں تبدیل کرنے والوں کا دور گزر چکا ہے اور ہمارے جلسوں میں رکاوٹ ڈالنے والے 25جولائی کے بعد عوام سے منہ چھپاتے پھریں گے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے خوشمقام میں انتخابی جلسہ عام اور یو سی جبہ تر ، جبہ خشک سمیت مختلف علاقوں میں شمولیتی تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ سابق وزیر اعلیٰ اے این پی پر الزامات لگاتے نہیں تھکتے حالانکہ انہوں نے جب سے سیاست میں قدم رکھا صرف کرسی کو ترجیح دی اور ہر حکومت کا حصہ رہے ، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی میں کرپشن کی بنیاد رکھنے والے بھی پرویز خٹک ہیں اور ان کی گروپ بندیوں اور حرکات کی وجہ سے وجیہ الدین نے استعفیٰ دے دیا تھا ، انہوں نے خبر دار کیا کہ ہم باچا خان بابا کے عدم تشدد کے فلسفے پر کاربند ہیں لہٰذا نفرت پر مجبور نہ کیا جائے اور ہمارے جلسوں کو خراب کرنے کی بھونڈی کوششیں نہ کی جائیں ، انہوں نے کہا کہ ہم باچا خان کے سپاہی ہیں اور صرف عوامی مفاد اور انسانیت کی خدمت کے پیش نظر عملی سیاست کرتا ہوں ، انہوں نے کہا کہ قوم کی خدمت ہمارا نصب العین ہے اور یہی ہمارے ایمان کا حصہ ہے ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ ہم بلا رنگ و نسل اور بلا تفریق سب کی خدمت کریں گے ،انہوں نے کہا کہ زیادتی اتنی کی جائے جتنی کل کو خودبرداشت کر سکیں ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ میرے حلقہ سے گزشتہ الیکشن میں کامیاب ہونے والے پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی نے نیا ریکارڈ قائم کیا ہے اور اسمبلی میں پانچ سال تک چپ کا روزہ رکھے رکھا اور کوئی لفظ تک نہ بولا انہوں نے کہا کہ حلقے کے عوام کی خاطر کوئی کام نہیں کیا گیا اس کے برعکس میں نے اپنے دور میں اجمل خٹک پولی ٹیکنیک انسٹی ٹیوٹ قائم کیا اسے بھی یہاں سے منتقل کر دیا گیا اور اس میں امورٹڈ افراد کو ملازمتیں دی گئیں ، انہوں نے کہا کہ حکومت میں آ کر اپنے حلقے کا کالج واپس لے کر آئیں گے ،میاں افتخار حسین نے الیکشن کمیشن کی توجہ ایک بار پھر اس جانب دلائی کہ مختلف حلقوں میں سابق حکومت کے نمائدوں نے سیاسی رشوت کا بازار گرم کر رکھا ہے اور لوگوں کو ورغلانے کیلئے سرکاری وسائل کا بے دریغ استعمال کیا جا رہا ہے ، انہوں نے کہا کہ بیورکریسی کی تقرریوں اور تبادلوں پر تاحال سوالیہ نشان ہے جو نگران حکومت کی جانبداری کی طرف اشارہ کر رہا ہے ، انہوں نے کہا کہ اس معاملے کی نزاکت کا احساس کرتے ہوئے الیکشن کمیشن نوٹس لے اور تحفظات دور کرنے کیلئے اقدامات کرے ، انہوں نے کہا کہ حکومت میں آ کر عارضی امن کو حقیقی اور مستقل امن میں تبدیل کریں گے اور ملک کی بقا اور سلامتی کیلئے ہر حد تک جائیں گے۔ انہوں نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں پر زور دیا کہ الیکشن مہم میں مزید تیزی لائیں ۔

پانچ سال تک عوام کا استحصال کرنے والوں کا یوم حساب قریب ہے، سردار حسین بابک

 June-2018  Comments Off on پانچ سال تک عوام کا استحصال کرنے والوں کا یوم حساب قریب ہے، سردار حسین بابک
Jun 292018
 

پانچ سال تک عوام کا استحصال کرنے والوں کا یوم حساب قریب ہے، سردار حسین بابک
 مہنگائی اور بے روزگاری کا خاتمہ کر کے عوام کی بنیادی ضروریات زندگی تک رسائی ممکن بنائیں گے۔
 مختلف حلقوں میں سیاسی رشوت کے طور پر جاری ترقیاتی کاموں کا الیکشن کمیشن کو نوٹس لینا چاہئے۔
اے این پی حکومت میں آ کر 10لاکھ روپے تک بلاسود قرضے فراہم کرے گی ۔ 
 پانچ سال تک صوبے میں کرپشن کے خاتمے کے دعویداروں نے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔
ترقی کا رکا ہوا عمل اے این پی دوبارہ شروع کرے گی، پی کے 22میں انتخابی مہم کے دوران اجتماعات سے خطاب 

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور پی کے 22کے امیدوار سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ پانچ سال تک عوام کا استحصال کرنے والوں کا یوم حساب قریب ہے ،اقتدار میں آ کر مہنگائی اور بے روزگاری کا خاتمہ کر کے عوام کی بنیادی ضروریات زندگی تک آسان رسائی ممکن بنائیں گے ، تعلیم کا فروغ اور ہر ضلع میں یونیورسٹی اولیں ترجیح ہو گی ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی انتخابی مہم کے دوران کوز کلے مندنڑ میں تنظیمی اجلاس اور مختلف مقامات پر شمولیتی تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر جماعت اسلامی ، اور دیگر مختلف سیاسی جماعتوں سے کئی با اثر سیاسی شخصیات نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، سردار حسین بابک نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں ،انہوں نے کہا کہ سابق حکومت کی ناقص اور غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں سے بری طرح متاثر ہونے افراد اے این پی میں جوق در جوق شامل ہونے ہو رہے ہیں جو اے این پی پر ان کے اعتماد کا مظہر ہے ، انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے گزشتہ دور میں تعلیم اور صحت کے حوالے سے جو انقلابی اصلاحات کیں وہ تاریخ کا حصہ ہیں اورحکومت میں آ کر ترقی کا رکا ہوا عمل دوبارہ شروع کریں گے ، سردار حسین بابک نے کہا کہ مختلف حلقوں میں اب بھی سیاسی رشوت کے طور پر ترقیاتی کام جاری ہیں جن کا الیکشن کمیشن کو نوٹس لینا چاہئے ، انہوں نے کہا کہ اے این پی کامیابی کے بعد بے روزگاری کے خاتمے پر توجہ دے گی اور نوجوانوں کو 10لاکھ تک بلاسود قرضے فراہم کرے گی تاکہ وہ اپنے لئے روزگار کے مواقع پیدا کر سکیں،پشاور بی آر ٹی سابق حکومت نے اپنے ذاتی مقاصد کیلئے شروع کی اور مفادات حاصل کر کے اسے ادھورا چھوڑ دیا گیا، انہوں نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں پر زور دیا کہ الیکشن کی بھرپور تیاریاں جاری رکھیں اور عوام اپنے حقوق کے تحفظ اور اپنی آئندہ نسلوں کی بقا کیلئے اے این پی کو کامیاب کرئیں، انہوں نے کہا کہ 350ڈیموں کے وعدے جھوٹے ثابت ہوئے اور پانچ سال تک صوبے میں کرپشن کے خاتمے کے دعویداروں نے کوئی قدم نہیں اٹھایا، انہوں نے کہاکہ پختون قوم جاگ گئی ہے اور وہ دھرنے والوں کی حقیقت جان چکے ہیں اور25جولائی کو اپنے ووٹ کی طاقت سے نام نہاد تبدیلی والوں سے بدلہ لیں گے۔

حکومت میں آکر ترقی کا عمل دوبارہ شروع کرینگے۔ میاں افتخارحسین

 June-2018  Comments Off on حکومت میں آکر ترقی کا عمل دوبارہ شروع کرینگے۔ میاں افتخارحسین
Jun 282018
 

حکومت میں آکر ترقی کا عمل دوبارہ شروع کرینگے۔ میاں افتخارحسین
سرکاری ملازمین کی سابق دور حکومت میں جو بے توقیری کی گئی اس کا ازالہ کیا جائے گا۔
باچا خان نے ہنرمندوں کی اہمیت اجاگر کرنے پر زور دیا، یہ معاشرے کا قیمتی سرمایہ ہیں۔
 نظریاتی کارکن ہماری اصل بنیاد ہیں جبکہ نئے شامل ہونے والوں کو سر کا تاج بنا کر رکھیں گے۔
کامیابی کی صورت میں اپنے حلقے کے کاموں کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائیگا۔
تبدیلی سرکار کے دعووں کی حقیقت عوام جان گئے ہیں، جلوزئی اور خدرزئی سمیت مختلف مقامات پر جلسوں سے خطاب
پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ کسی کو راضی اور قائل کرکے اپنی پارٹی میں شامل کرنا ایک مشکل مرحلہ ہوتا ہے اور اے این پی کے کارکن اس مصروف وقت میں انتھک محنت کرکے یہ فریضہ سرانجام دے رہے ہیں، نظریاتی کارکن عوامی نیشنل پارٹی کا قیمتی اثاثہ ہیں جبکہ نئے شامل ہونے والوں کو سرکا تاج بناکر رکھیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے انتخابی مہم کے دوران شابڑہ جلوزئی اور خدرزئی میں بڑے جلسہ عام اور کندی تازہ دین میں شمولیتی تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر سینکڑوں افراد نے اپنی جماعتوں سے مستعفی ہو کر اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، میاں افتخار حسین نے نئے شامل ہونے والوں کو مبارکباد دی اور کہاکہ سابق دور حکومت نے عوام کو یکسر نظرانداز کیاتھا اوروہ کوئی ترقیاتی کام مکمل کرنے سے قاصر رہے اس کے علاوہ سرکاری ملازمین کی بے توقیری کی گئی ، آج ایک کروڑ نوکریاں دینے کے وعدے کرنے والے بتائیں کہ انہوں نے پانچ سال میں خیبر پختونخوا میں کتنے لوگوں کو روزگار دیا ، میاں افتخارحسین نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی کا انتخابی منشور عوامی امنگوں کی عکاسی کرتا ہے جس میں تعلیم اور صحت پر خصوصی توجہ دی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم عملی سیاست پر یقین رکھتے ہیں اور بلاتعصب ہر شہری کے مسائل کے حل کے متمنی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے اس سے قبل عوام کی راہنمائی کی ہے اور اپنے دور حکومت میں ہم نے جتنے کام کئے، وہ ہم سے پہلے اور بعد میں آنے والی حکومتیں مل کر نہیں کرسکیں ہیں، انہوں نے کہا کہ جو لوگ کام کرتے ہیں عوام انہی سے زیادہ توقعات وابستہ رکھتے ہیں، انہوں نے وعدہ کیا کہ اگر انہیں کامیابی ملی تو ان کی حکومت تعمیر و ترقی کے کاموں میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھے گی اور وہ اپنے حلقے کے ادھورے کاموں کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے ترجیحی بنیادوں پرکام کرینگے۔
انہوں نے مزید کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی کے منشور کے مطابق بے گھر افراد کیلئے کم قیمت پر مکانات کی تعمیرکی منصوبہ بندی ، دہشت گردی سے متاثرہ افراد کیلئے انشورنس پلان کی ترتیب، مزدوروں کی اجرت میں اضافہ اور نوجوانوں کی فلاح اور روزگار کیلئے اقدامات اے این پی حکومت کی ترجیحات میں شامل ہونگی ۔ ایک ضلع ایک یونیورسٹی کے بنیادی نظریئے کے تحت خیبر پختونخوا میں شامل ہونے والے نئے اضلاع سمیت صوبے بھر میں تعلیمی اداروں کا جال بچھایا جائیگا جبکہ پانچ سے سولہ سال تک کے طلباء و طالبات کو مفت تعلیم فراہم کی جائیگی۔

اسفندیار ولی خان اور میاں افتخار حسین کا لالہ اورنگزیب کی وفات پر اظہار تعزیت 

 June-2018  Comments Off on اسفندیار ولی خان اور میاں افتخار حسین کا لالہ اورنگزیب کی وفات پر اظہار تعزیت 
Jun 272018
 

اسفندیار ولی خان اور میاں افتخار حسین کا لالہ اورنگزیب کی وفات پر اظہار تعزیت 

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان اور جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے پارٹی کے مرکزی نائب صدر اور پی کے 34مانسہرہ کے امیدوار لالہ اورنگزیب خان کے انتقال پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے غمزدہ خاندان سے دلی تعزیت کی ہے ، اپنے تعزیتی بیان میں انہوں نے کہا کہ مرحوم کی وفات سے اے این پی ایک مدبر ، اصول پسند اور باصلاحیت سیاستدان سے محروم ہو گئی ہے ،انہوں نے کہا کہ مرحوم لالہ اورنگزیب نے ہمیشہ حق و انصاف اور حقوق کیلئے جدوجہد کی جس پر انہیں شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں، انہوں نے کہا کہ مرحوم نے زندگی بھر انسانیت کی خدمت کو شعار بنائے رکھا ، ان کی وفات سے پیدا ہونے والا خلاء شاید ہی کبھی پُر ہو سکے گا، انہوں نے غمزدہ خاندان سے دلی تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی مغفرت اور پسماندگان کے صبر جمیل کیلئے بھی دعا کی۔