حکمرانوں کی بے توجہی سے زرین پریشان جیسے سپوت مٹی میں مل رہے ہیں، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے پشتو کے عظیم شاعر زرین پریشان کی وفات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کی مغفرت کی دعا اور ان کے خاندان کے ساتھ دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مرحوم شاعر نے ساری عمر پشتو ادب کی خدمت کی ہے اور اپنی شاعری کے ذریعے عوام میں شعور اجاگر کرنے کی کوشش کی ہے ، انہوں نے کہا کہ ان کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا، امیر حیدر خان ہوتی نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا ہے کہ حکومت کی جانب سے ان کے علاج معالجے پر کوئی توجہ نہیں دی گئی ، زرین پریشان پختون قوم کا اثاثہ تھے اور حکومتی بے حسی اور قوم کے سپوتوں پر توجہ نہ دینا حکومتی غیر ذمہ داری ظاہر کرتی ہے،انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کو ذمہ داری کا کردار ادا کرنا چاہئے اور شعراء اور ادبا کے مشکل وقت میں قوم کے سپوتوں کا قومی خزانے پر حق بنتا ہے،بدقسمتی سے مسلط کردہ حکومت عوامی مشکلات و مسائل سے بے خبر ہے اور یہی وجہ ہے کہ زرین پریشان جیسے تخلیقی اور تحقیقی ذہن کے مالک ہسپتالوں میں بے سروسامانی کی حالت میں علاج معالجے کی سہولیات سے محروم رہتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ محکمہ کلچر و ثقافت کو اپنے کام پر توجہ دینے کی ضرورت ہے اور صوبے کے شعراء ، ادیبوں فنکاروں اور تمام ہنر مندوں کا فراخدلی سے ضرورت کے وقت مالی تعاون یقینی بنانا چاہئے۔

 

Facebook Comments