حکومت کی الٹی گنتی شروع ، اے این پی نے علم بغاوت بلند کر دیا

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی الیکشن کمیشن کے چیئرمین میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ حکومت کی الٹی گنتی شروع ہو چکی ہے اور اے این پی حکومت گرانے کیلئے اپوزیشن جماعتوں کا ساتھ دے گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں اے این پی پنجاب کی کابینہ کے انتخاب کے بعد پریس بریفنگ کے دوران کیا ، اس موقع پر انہوں نے اے این پی پنجاب کی صوبائی کابینہ کے بلا مقابلہ انتخاب کا اعلان کیا جس کے مطابق منظور احمد خان اے این پی پنجاب کے آئندہ چار سال کیلئے صدر اور امیر بہادر خان ہوتی جنرل سیکرتری منتخب ہو گئے،کابینہ کے دیگر ممبران میں سینئر نائب صدر عمر خان گردیزی سینئر نائب صدر ،نائب صدر میر عالم خان،نائب صدر ڈاکٹر محمد شفیق،نائب صدر اشرف علی، نائب صدر خاتون انجم شہزاد،ایڈیشنل جنرل سیکرٹری سید عطا اللہ شاہ،ڈپٹی جنرل سیکرٹری احسان اللہ خان، سیکرٹری اطلاعات ندیم سرور،جائنٹ سیکرٹری نثار محمد خان،جائنٹ سیکرٹری سلیم احمد زئی،جائنٹ سیکرٹری محمد خالد، جائنٹ سیکرٹری خاتون عاصمہ علی ایڈوکیٹ،سیکرتری مالیات نثار شنواری، سیکرتری ثقافت ڈاکٹر تاج محمد بونیری اور سالار اعلیٰ ریٹائرڈ صوبیدار عطا محمد شامل ہیں۔میاں افتخار حسین نے کہا کہ جمہوریت ہو یا مارشل لاء اے این پی ہر چار سال بعد جماعت کے اندر الیکشن کے ذریعے نمائندوں کا انتخاب کراتی ہے ، جبکہ پی ٹی آئی میں عہدے چمک کی بنیاد پر تقسیم کئے جاتے ہیں،انہوں نے کہا کہ کسی بھی سیاسی جماعت میں اے این پی طرز پر انتخابی عمل نہیں ہوتا بلکہ صرف نامزدگیاں کی جاتی ہیں ،یہاں تک کہ حکومتی جماعت بھی جمہوریت سے عاری ہے ،کیونکہ وہ اسٹیبلیشمنٹ کی پیداوار ہے ، پاکستان کی 70سالہ تاریخ میں اتنے غیر سنجیدہ اور مسخرے لوگ حکومت میں نہیں آئے ، وزیر اعظم اور ان کے وزیر خزانہ جھوٹ بولنے کی مشینیں ہیں،انہوں نے کہا کہ مسلط وزیر اعظم کو دشمن کی ضرورت نہیں وہ اپنی ٹیم کے ہاتھوں رسوا ہو گا، میاں افتخار حسین نے کہا کہ اللہ عوام کو حکمرانوں کے شر سے محفوظ رکھے،انہوں نے کہا کہ حکومت آٹھ ماہ سے عوامی مسائل کو حل کرنے کی بجائے اپنی توپوں کا رخ نواز شریف اور آصف زرداری کی جانب کر رکھا ہے، ، سیاسی مخالفین کی بیماری اورگھریلو حالات کا مذاق ارانے والی عمران کی خوشامدیوں کی ٹیم اپنے معاملات کو ذاتی معاملات کہ کر دبانا چاہتے ہیں،میاں افتخار حسین نے کہا کہ جن کی کوئی عزت نہیں ہوتی وہ دوسروں کی عزت نہیں کر سکتے ، انہوں نے کہا کہ احتساب کو انتقام کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے اور نیب کا چیئرمین حکومت کا سٹنٹ مین ہے ،انہوں نے پشاور میٹرو کے ھوالے سے کہا کہ معائنہ ٹیم کی رپورت نیب کیلئے کافی ہے اور کرپشن کے اس میگا سکینڈل کی تحقیقات میں لیت و لعل سے کام لینا نیب کو مشکوک بنا رہا ہے،انہوں نے مطالبہ کیا کہ پشاور کو تباہ کرنے والوں پر ہاتھ ڈالا جائے ، انہوں نے کہا کہ عمران اسٹیلشمنٹ کا چابی والا کھلونا ہے اور اشارے کے بغیر ناچ نہیں سکتا،انہوں نے محمد نواز شریف سے درخواست کی کہ حکومت گرانے کیلئے اپوزیشن جماعتوں و آصف زرداری کا ساتھ دیں ،اے این پی اب قوم کو بچانے اور ملک کی سلامتی کیلئے حکومت کے تابوت میں آخری کیل ٹھونکنے کیلئے ساتھ دے گی،انہوں نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ اپنا قبلہ درست کر لے ،ملک کی بڑی جمہوری جماعتوں کو ناراض کر کے فوج نے کٹھ پتلی شخص کو اقتدار حوالے کیا جو اس قابل نہیں تھا ،ملک کو درپیش مسائل و مشکلات کی ذمہ داری بھی ان قوتوں پر عائد ہوتی ہے جو ان مسخروں کو لے کر آئیں۔انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ ملک کا وزیر اعظم بھکاری ہے اور دنیا کا سب سے بڑا کشکول عمران نے اٹھایا ہوا ہے ، انہوں نے کہا کہ عوام کو زندہ درگور ہونے سے بچانے کیلئے حکومت کو گرانا ہو گا۔

 

Facebook Comments
Translate »