مودی الیکشن جیتنے کیلئے جارحیت کی بجائے اپنی فوج پولنگ سٹیشنوں پر تعینات کریں، ایمل ولی خان


پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے اسٹیبلشمنٹ ملک کے ہر ادارے پر قابض ہے اور سرحدوں کی بجائے ملک میں کاروباری مصروفیات میں زیادہ مصروف ہے ، مودی کو الیکشن جیتنے کیلئے اپنی فوج بارڈر کی بجائے پولنگ سٹیشنوں پر تعینات کرنی چاہئے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے سرکی ٹیٹارہ میں اے این پی چارسدہ کی ضلعی کابینہ کے انتخابی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر تمام کابینہ بلا مقابلہ منتخب کی گئی ، ایمل ولی خان نے نو منتخب صدر کو ان کی کابینہ سمیت کامیابی پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ باچا خان کے پیروکاروں نے جمہوری اقدار کو فروغ دیا اور ضلعی انتخابات اسی سلسلے کی کڑی ہیں،انہوں نے کہا کہ 47ء سے لے کر 2018تک اے این پی کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا جا تا رہا ہے ، اور گزشتہ انتخابات میں پختون قیادت کو جس طرح پارلیمنٹ سے دور رکھا گیا وہ حقیقت کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ، ایمل ولی نے کہا کہ عوام کے حقیقی نمائندوں کو حکومت نہیں بنانے دی جاتی اور اسٹیبلشمنٹ اپنی مرضی کی پارلیمان قائم کر کے اسے اپنے قبضہ میں رکھنا چاہتی ہے،انہوں نے کہا کہ اے این پی کو ختم کرنے کیلئے ہمیشہ ہر حربہ استعمال کیا گیا یہاں تک کہ طالب کو دہشت گرد بنا کر ہماری حکومت کے خلاف میدان میں اتار دیا گیا لیکن ہم مر مٹنے والوں میں سے ہیں کبھی جھک نہیں سکتے،انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ آج پارلیمنٹ میں جو لوگ بٹھائے گئے ہیں وہ قانون سازی کی ابجد سے بھی واقف نہیں لیکن مقتدر قوتیں انہیں اپنے مقصد کیلئے استعمال کر رہی ہیں ،انہوں نے کہا کہ مسلط وزیر اعظم منہ دھونے کیلئے امن اور صلح کی بات کر رہے ہیں ،ملک پر جارحیت کی کوشش کرنے والوں کو سزا دی جاتی ہے نہ کہ انہیں چائے پلا کر رخصت کیا جاتا ہے ، انہوں نے کہا کہ ابھی نندن کو چھڑانے کیلئے کسی نے درخواست تک نہ دی لیکن ہمارے وزیر اعظم نے کانپتے ہوئے اسے واپس بھیج دیا ،انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو کی تقریر پر واویلا کرنے والے اپنے گریبانوں میں جھانکیں اور قوم کو بتائیں کہ کالعدم تنظیموں کو حکومت کیوں سپورٹ کر رہی ہے، انہوں نے کہا کہ پورے ملک میں کالعدم تنظیموں کی سرگرمیاں دھڑلے سے جاری ہیں جبکہ خیبر پختونخوا کے وزیر اعلیٰ دکھاوے کی کاروائی کیلئے دو تنظیمیں بین کر رہے ہیں ، ایمل ولی خان نے کہا کہ مدارس اور کالعدم تنظیموں کو کروڑوں روپے چندہ دینے اور طالبان کیلئے دفاتر کا مطالبہ کرنے والے قوم کے دشمن ہیں۔انہوں نے کہا کہ جب بھی ملک پر سخت حالات آئے تو حکمرانوں نے مدد کیلئے اسفندیار ولی خان کا دروازہ کھٹکھٹایا لیکن مقصد پورا ہونے پر اے این پی کو دیوار سے لگانے کی کوششیں کی جاری رہیں ، انہوں نے کہا کہ ہم شہیدوں اور غازیوں کی جماعت کے سپاہی ہیں اور ملک پر کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔

Facebook Comments