دہشت گردی کے خاتمے اور پرامن خطے کیلئے ہمسایہ ممالک کے ساتھ دوستانہ تعلقات ضروری ہیں

دہشت گردی کے خاتمے اور پرامن خطے کیلئے ہمسایہ ممالک کے ساتھ دوستانہ تعلقات ضروری ہیں، میاں افتخار حسین

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے امن کے قیام کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پختونوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی اور آنے والی نسلوں کے محفوظ مستقبل کیلئے یہ قربانیاں مشعل راہ ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مردان کچہری بم دھماکے کا ایک سال مکمل ہونے پر شہداء کی برسی کے حوالے سے منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،انہوں نے سانحے میں شہید ہونے والوں کو خراج عقیدت پیش کیا اور ان کی مغفرت کیلئے فاتحہ خوانی بھی ، اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ 40سال تک پختونوں کو جنگ کا ایندھن بنایا گیا اور ایک سازش کے تحت آج تک پختونوں کی نسل کشی کی جا رہی ہے ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ باچا خان اور ولی خان بابا نے ہمیشہ اس جنگ میں کودنے کی مخالفت کی لیکن ان پر الزامات لگائے گئے تاہم آج تمام سیاسی جماعتیں اے این پی کے مؤقف کی تائید کرتی ہیں ، اور یہ ایشو ہر زبان پر ہے کہ پرائی جنگ اپنے گھر لانے کے خطرناک نتائج سامنے آئے ، انہوں نے کہا کہ خطے کی صورتحال تبدیل ہو چکی ہے،انہوں نے کہا کہ جب تک پاکستان اور افغانستان اپنی خارجہ و داخلہ پالیسیاں سپر پاور کی بجائے قومی مفاد میں نہ بنائیں تب تک دہشت گردی کا خاتمہ ممکن نہیں،انہوں نے کہا اے این پی روز اوّل سے پاکستان کے لئے ایک آزاد خارجہ کی حامی رہی ہے۔ 1980 کی دہائی میں جب اس خطے میں جہاد کے نام پر بڑی طاقتوں نے اپنے مفادات کے لئے فساد رچایا تو ہم نے اس وقت بھی اس کی مخالفت کی تھی آج بھی ہمارا مطالبہ یہ ہے کہ تمام پڑوسی ممالک بالخصوص افغانستان کے ساتھ اعتماد بحال کرنے کے لئے اقدامات اٹھائے جائیں اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے دونوں ملک مل کر فیصلہ کن اقدامات اٹھائیں، انہوں نے کہا کہ خطے کے اندر محاذ آرائی کا خاتمہ کرنے سے جہاں دہشت گردی کا خاتمہ ممکن ہوگا وہاں کسی بیرونی دباؤ کے لئے گنجائش نہیں رہیگی، ،انہوں نے کہا کہ موجودہ دور میں پختونوں کا اتحاد و اتفاق وقت کی اہم ضرورت ہے اور اگر پختون آپس میں متحد ہو جائیں تو کوئی ان کی طرف میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا،صوبائی حکومت کی کارکردگی کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جو حکمران ڈینگی کے سامنے بے بس ہو جائیں ان کے کوئی کیا توقع رکھ سکتا ہے ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ صوبے کے حالات انتہائی سنگین ہیں اور عوام خود کو غیر محفوظ تصور کر رہے ہیں ، انہوں نے ڈینگی سے جاں بحق افراد کی تعداد آئے روز بڑھنے پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ حکومت ٹھوس اقر فوری اقدامات اٹھائے تاکہ مزید جانیں ضائع ہونے سے بچائی جا سکیں۔ آخر میں انہوں نے سانحہ کچہری مردان کے شہداء کی مغفرت کیلئے خصوصی دعا کی۔

Facebook Comments