پشاور میٹرو وزیر اعلیٰ کی کمیشن کا بڑا ذریعہ ہے ، تکمیل حکمرانوں کے بس کی بات نہیں

پشاور میٹرو وزیر اعلیٰ کی کمیشن کا بڑا ذریعہ ہے ، تکمیل حکمرانوں کے بس کی بات نہیں ،میاں افتخار حسین

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا کہ پشاور میٹرو صرف کمیشن کیلئے شروع کی گئی ہے اور اس کی تکمیل کسی صورت حکمرانوں کے بس کی بات نہیں ، خیبر پختونخوا کے عوام کو صرف دھوکہ دیا گیا ، پرویز خٹک کی طرح اقتدار حاصل آسان ہے تاہم کوئی بھی با ضمیر شخص ایسا کر نہیں سکتا، ان خٰالات کا اظہار انہوں نے پبی خان شیر گڑھی میں شمولیتی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر سینکڑوں افراد نے دیگر جماعتوں سے مستعفی ہو کر اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، میاں افتخار حسین نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور نہیں مبارکباد پیش کی ، اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ پنجاب میں میٹرو کی مخالفت اور اسے جنگلہ بس کہنے والوں کو اپنی کمیشن کیلئے بی آر ٹی کا خیال آ گیا ، تعلیم اور صحت کے شعبوں میں بد انتظامی کے بعد شہر کو کھنڈرات میں تبدیل کر دیا گیا ہے ،انہوں نے کہا کہ اے این پی نے اپنے دور میں تعلیمی شعبہ میں جو اصلاحات کیں وہ صوبے کی تاریخ کا حصہ ہیں اور دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے باوجود خزانہ بھرا ہوا چھوڑا تھا جبکہ موجودہ حکومت نے صرف ساڑھے چار سال میں خزانہ لوٹ کر صوبے کو 300ارب روپے سے زائد کا مقروض کر دیا ہے ، انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ حکمرانوں نے صوبے کے قیمتی وسائل اور ذرائع آمدن کو بے دردی سے لوٹا اور آنے والی حکومت کو قرضے اتارنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا، انہوں نے کہا کہ اے این پی نے ڈٹ کو نہ صرف دہشت گردی کا مقابلہ کیا بلکہ اس جنگ میں اپنے سینکڑوں ساتھیوں کی قربانی بھی دی ، انہوں نے کہا کہ اس کے برعکس حکومت نے دہشتگردوں کی مالی معاونت کی اور ان کیلءئے دفتر کا مطالبہ کرتے رہے جبکہ اے ڈی پی میں ان کیلئے رقم بھی رکھی گئی ہے ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ کپتان پنجاب میں خیبر پختونخوا پولیس کی تعریفیں کرتے ہیں اور ان کے وزیر اعلیٰ پولیس پر تنقید کے نشتر چلاتے رہے ہیں حالانکہ یہ وہی پولیس ہے جس نے عوام کی جان و مال کی حفاظت کیلئے دہشتگردوں کا راستہ روکا اور صوبے کو تباہی سے بچانے کیلئے دہشتگردوں کے سامنے سیسہ پلائی دیوار بن کر ڈٹی رہی ، میاں افتخار حسین نے گزشتہ دنوں چینی سفیر کے ساتھ ہونے والی ملاقات کا بھی ذکر کیا اور کہا کہ ہمسایہ دوست ملکل نے اے این پی کی قربانیوں کا اعتراف کیا ہے اور اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے کہ پختونوں کو مغربی اکنامک کوریڈور میں ان کا جائز حق ضرور ملے گا ، انہوں نے کہا کہ صوبے کے عوام موجودہ حکومت کی غیر سنجیدہ اور ناقص پالیسیوں سے نالاں ہو چکے ہیں اور آئندہ الیکشن میں اے این پی پر بھرپور اعتماد کریں گے ۔

Facebook Comments