تیسری دنیا کے اکثر ممالک میں خواتین اپنے بنیادی حقوق سے محروم ہیں ، اسفندیار ولی خان

تیسری دنیا کے اکثر ممالک میں خواتین اپنے بنیادی حقوق سے محروم ہیں ، اسفندیار ولی خان

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ خواتین کا عالمی دن منانے کا مقصد دنیا بھر میں رہنے والی تمام خواتین کو معاشرے میں ان کا جائز مقام دلانے کی کوشش کرنا ہے تا کہ وہ بھی برابری کی بنیاد پر باعزت زندگی گزار سکیں ،عالمی یوم خواتین پر اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ ستم ظریفی یہ ہے کہ آج بھی دنیا بھر اور خصوصی طور پر تیسری دنیا کے اکثر ممالک میں خواتین اپنے بنیادی حقوق سے محروم ہیں ، انہوں نے کہا کہ اے این پی واحد سیاسی جماعت ہے جس کا کوئی الگ خواتین ونگ نہیں بلکہ بنیادی تنظیم سے لے کر مرکزی تنظیم اور اداروں میں بھی خواتین کو کثیر تعداد میں شریک کیا گیا ہے اور پارلیمانی سیاست میں قومی اسمبلی، صوبائی اسمبلی اور سینیٹ میں بھی مناسب حصہ دیا گیا ہے جبکہ بلدیاتی الیکشن میں بھی ان کو بھرپور توجہ دی گئی ہے اور آئندہ بھی دی جائے گی کیونکہ یہ سوچ ہمیں باچا خان بابا اور ولی خان بابا سے ورثے میں ملی ہے ، انہوں نے کہا کہ خواتین صدیوں سے روایتوں کی چکی میں پس رہی ہیں اور رسم و رواج کی زنجیروں میں بندھی اب بھی اپنی شناخت کی تلاش میں در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں، انہوں نے کہا کہ 1977میں اقوام متحدہ نے پہلی بار باقاعدہ طور پر خواتین کے حقوق اور ان کا عالمی دن منانے کیلئے 8مارچ کا دن مخصوص کیا جبکہ اقوام متحدہ کی جانب سے ہر سال اس دن کیلئے خاص موضوع کا انتخاب کیا جاتا رہا ہے ،اسفندیار ولی خان نے کہا کہ خواتین کو اپنے حقوق سے مکمل آگاہی کی ضرورت ہے کیونکہ لاعلمی کی وجہ سے ان کے حقوق غصب کئے جاتے ہیں، انہوں نے کہا کہ خواتین کو اپنے آپ پر اعتماد کرنے کی اشد ضرورت ہے تا کہ کوئی بھی ان کے حقوق پر ڈاکہ نہ ڈال سکے ،انہوں نے کہا کہ یہ صرف ایک دن ہی نہیں بلکہ معاشرے کو اعلیٰ مقام تک پہنچانے کیلئے ہمیں سال بھر خواتین کے حقوق دلانے کی ضرورت ہے تا کہ ایک ترقی یافتہ جدید اور برابری کی بنیاد پر معاشرے کا قیام جلد سے جلد ممکن ہو سکے۔ انہوں نے کہا کہ انسانیت کی بنیاد پر عورت اور مرد انسان ہیں اور ہر انسان کے بنیادی حقوق ہوتے ہیں،خواتین کو جدید خطوط پر معاشرے میں فعال کردار ادا کرنے کیلئے ابھی بہت سے اقدامات اٹھانے باقی ہیں جس کیلئے بھرپور جدوجہد کی ضرورت ہے اور اے این پی اس جدوجہد میں فعال کردار ادا کرے گی۔

Facebook Comments