اسفندیار ولی خان کا نواز شریف کی رہائی کے فیصلے کا خیر مقدم 

 Sept-2018  Comments Off on اسفندیار ولی خان کا نواز شریف کی رہائی کے فیصلے کا خیر مقدم 
Sep 192018
 

اسفندیار ولی خان کا نواز شریف کی رہائی کے فیصلے کا خیر مقدم 
نواز شریف کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا تھا۔
نواز شریف کی رہائی جمہوریت کی فتح ہے۔
تمام جمہوری قوتوں کو مل کر جمہوریت کی مضبوطی کیلئے کام کرنا چاہئے۔
عوامی حکمرانی کو یقینی بنانے کیلئے مل جل کر کام کرنا ہوگا ۔
ملک میں کرپشن کے خلاف بلاامتیاز احتساب ناگزیر ہے ۔
نواز شریف کی رہائی جمہوریت دشمن قوتوں کی شکست ہے ۔
ملکی اداروں کو انصاف کے تقاضے پورے کرنے چاہئیں۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان نے نواز شریف کی سزا معطلی کے فیصلے کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے اسے جمہوریت کی فتح قرار دیا ہے ، اپنے ایک بیان میں اسفندیار ولی خان نے کہا کہ نواز شریف کو کمزور کیسز میں سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا تھا ، انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی رہائی کا فیصلہ نیک شگون ہے اور مستقبل میں جمہوریت کیلئے ایک پلیٹ فارم پر کاوشیں جاری رکھی جائیں گی،انہوں نے کہا کہ عدالت سے انصاف کی توقع تھی اور عدالت عالیہ نے مناسب وقت پر بہترین فیصلہ دیا ، انہوں نے امید ظاہر کی کہ مستقبل میں ان کیسز کے خاتمے کیلئے انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں جمہوریت کے استحکام کیلئے ملک کے تمام اداروں کو میرٹ پر کام کرنا چاہئے ،جمہوریت ہی تمام مسائل کا حل ہے،اسفندیار ولی خان نے کہا کہ سیاسی لوگوں کا احتساب عوام کرتے ہیں تاہم نواز شریف کی رہائی سے جمہوری قوتیں مضبوط ہونگی ،ملکی اداروں کو انصاف کے تقاضے پورے کرنے چاہئیں ، انہوں نے کہا کہ تمام اداروں کا اپنے دائرہ اختیار میں رہتے ہوئے کام کرنا ملک و قوم کے مفاد میں ہے ،انہوں نے کہا کہ عوام کی حکمرانی یقینی بنانے کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کو مل کر جدوجہد کرنی چاہئے اور انتقامی سیاست کو دفن کرنا چاہئے ،اختیارات کا ناجائز استعمال ملک کے کمزوری کا باعث بنے گی ملک میں کرپشن کے خلاف بلاامتیاز احتساب وقت کی ضرورت ہے۔

اے این پی کی مرکزی کونسل کا اجلاس یکم اکتوبر کو طلب کر لیا گیا

اے این پی کی مرکزی کونسل کا اجلاس یکم اکتوبر کو طلب کر لیا گیا پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیار ولی خان کی ہدایت پر مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے پارٹی کی مرکزی کونسل کا اجلاس یکم اکتوبر بروز پیر دن گیارہ بجے باچا خان مرکز Read More……

پارلیمنٹ کے بدلے اے این پی کے کئی رہنماؤں پر پی ٹی آئی میں شامل ہونے کیلئے دباؤتھا

پارلیمنٹ کے بدلے اے این پی کے کئی رہنماؤں پر پی ٹی آئی میں شامل ہونے کیلئے دباؤتھا، اسفندیار ولی خان سندھ ۔پنجاب،اور بلوچستان کی قیادت کو پارلیمنٹ میں پہنچا کر پشتونوں کو باہر کر دیا گیا۔ عمران خان بیساکھیوں کے سہارے وزیر اعظم بن گیا، ایک بیساکھی بھی ہلی تو وہ وزیر اعظم نہیں Read More……