فاٹا کا خیبر پختونخوا میں انضمام، اسفندیارولی خان کی قوم کو مبارکباد

 May-2018  Comments Off on فاٹا کا خیبر پختونخوا میں انضمام، اسفندیارولی خان کی قوم کو مبارکباد
May 242018
 

فاٹا کا خیبر پختونخوا میں انضمام، اسفندیارولی خان کی قوم کو مبارکباد
اکتیس ویں آئینی ترمیم منظور کرنے پر ممبران قومی اسمبلی کا شکریہ 
وقت آگیا ہے کہ ان علاقوں میں ہنگامی بنیادوں پر ترقی کا عمل شروع کیا جائے۔
آج ایک تاریخی دن ہے جس کیلئے تاریخی جدوجہد کی گئی ہے۔
ہر آنے والا دن پختونوں کیلئے امن، سکون، ترقی اور خوشحالی کا باعث ہو۔

پشاور (پ ر) عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیارولی خان نے فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم ہونے پر ساری قوم کو مبارکباد دی ہے۔ قومی اسمبلی سے 31ویں آئینی ترمیم کی منظوری کے بعد اپنے بیان میں اے این پی کے مرکزی صدر نے آج کے دن کو تاریخی قراردیتے ہوئے ممبران قومی اسمبلی کا شکریہ ادا کیا۔
انہوں نے کہا کہ فاٹا کا انضمام ملکی سلامتی اور مضبوطی کا ضامن ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ فاٹا کے عوام نے بہت تکالیف اور نقصانات اٹھائے ہیں اور اب وقت آگیا ہے کہ ان کے علاقوں میں ہنگامی بنیادوں پر ترقی کا عمل شروع کیا جاسکے تاکہ وہ اپنے اپنے علاقوں میں امن وسکون کے ساتھ زندگی بسر کرسکیں۔
اسفندیارولی خان نے کہا کہ اس تاریخی مرحلے کیلئے ہمارے مشران نے سختیاں جھیلیں ہیں، تکالیف اٹھائے ہیں، مسلسل جدوجہد کی ہے۔ آج کا دن ساری دنیا میں بسنے والے پختونوں کیلئے خوش بختی کا دن ہے اور اسی لئے تمام پختونوں کو مبارکباد دیتا ہوں اور امید رکھتا ہوں کہ ہر آنے والا دن پختونوں کیلئے امن، سکون، ترقی اور خوشحالی کا باعث ہو۔

اے این پی تمام مسائل کا حل آئین اور قانون کے مطابق چاہتی ہے ۔اسفندیار ولی خان

اے این پی تمام مسائل کا حل آئین اور قانون کے مطابق چاہتی ہے ۔اسفندیار ولی خان روز اول سے جمہوریت کی بالادستی ، آئینی و قانونی اور عدم تشدد کی بنیاد پر جدوجہدکی ہے۔ ملک میں جمہوریت کے علاوہ کوئی نظام نہیں چل سکتا، جمہوریت ڈی ریل ہوئی تونقصان صرف ملک کو ہو گا۔ Read More……

اے این پی نے مستحکم ملک کی خاطر کبھی کسی غیر جمہوری قوت کا ساتھ نہیں دیا

اے این پی نے مستحکم ملک کی خاطر کبھی کسی غیر جمہوری قوت کا ساتھ نہیں دیا، اسفندیار ولی خان بارہ مئی سیاسی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے ، شہید کارکنوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔ عوام کی لاشیں گرانے والے چہرے بے نقاب ہو چکے تھے بد قسمتی سے ان کے خلاف Read More……